site
stats
پاکستان

حیدرآباد فنڈ پر پاکستانی دعویٰ ختم کرنیکی بھارتی درخواست مسترد

اسلام آباد : برطانوی عدالت نے حیدرآباد فنڈ پرپاکستان کا دعویٰ ختم کرنیکی بھارتی درخواست مستردکردی۔

بھارت پینتیس ملین پاؤنڈزکی رقم پرپاکستان کادعویٰ غلط ہونا عدالت میں ثابت نہ کرسکا، وزارت خارجہ کے مطابق بھارت کو کیس ہارنے کی وجہ سے مقدمے کے اخراجات برداشت کرنا ہوں گے۔

پاکستان نے بھارت سے حیدر آباد فنڈز کیس جیت لیا پاکستان نے انگلش ہائی کورٹ میں بھارت سے 53 ملین پاونڈ کا دعوی جیت لیا ہے، انگلش ہائی کورٹ نے پاکستان کا موقف درست تسلیم کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان کا موقف اصولی اور ثبوتوں کے اعتبارسے درست ہے۔

ترجمان دفترخارجہ کا کہنا ہے کہ عدالت نے پاکستان کیخلاف تمام کوششوں کو مستردکر دیا، انہوں نے بتایا کہ ریاست حیدر آباد نے پاکستان سے تعاون مانگا تھا، پاکستان تنازعات مذاکرات کےذریعےحل کرناچاہتاہے۔

واضح رہے کہ سن1947 نظام آف حیدرآباد کی جانب سے پاکستان ایک ملین پاونڈ کی امداد دی گئی تھی ، 1948 کے بعد بھارت نے نہ صرف حیدر آباد پر قبضہ کر لیا تھا جس کے بعد بھارتی موقف تھا کہ ریاست نے بھارتی حکام کی رضامندی کے بغیر امداد دی تھی تاہم انگلش ہائی کورٹ یہ فیصلہ دیا ہے کہ ریاست حیدرآباد اس وقت ایک آزاد اور خودمختار ریاست تھی اس لیے پاکستان کام موقف درست ہے ۔

کیس کے ثبوت برطانوی ائرکائیو اور انیٹلی جنس اداروں کی رپورٹ اور حکومتی دستاویزات سے لے گئے تھے تاہم بھارتی ہٹ دھرمی نے ان ثبوتوں کو ماننے سے انکار کر دیا تھا ۔

اب بھارتی دراخوست مسترد ہونے کے بعد پاکستان کو نہ صرف 35 ملین پاونڈ بلکہ کیس پر آنے والے اخراجات بھی مل جائیں گے، حیدر آباد فنڈز ویسٹ منسٹر بنک میں کمشنر آف پاکستان کے نام سے رکھے گے تھے ۔

دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ پاکستان بھارت سے ایک ایک پائی وصول کریگا اور اگر بھارت اپیل میں گیا تو پاکستان اس کے لیے تیار ہے ۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top