The news is by your side.

Advertisement

پاک بھارت جوہری جنگ میں 12 کروڑ سے زائد افراد کی ہلاکت کا خطرہ

میونخ : میونخ سیکورٹی رپورٹ 2020 میں پاکستان اوربھارت کے درمیان جوہری جنگ کا خدشہ ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر  جنگ ہوئی تو2025 میں بارہ کروڑسے زائد لوگ فوری طورپرہلاک ہوجائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق میونخ سیکورٹی رپورٹ 2020 جاری کردی گئی ، جس میں خدشہ ظاہر کیا گیا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں کوئی واقعہ ہوا تو پاکستان اوربھارت کے درمیان جوہری جنگ چھڑسکتی ہے، جنگ ہوئی پوری دنیا متاثرہوگی اور بارہ کروڑسے زائد افراد فوری طور پر ہلاک ہوجائیں گے۔

رپورٹ میں بتایا گیا جنگ میں سو سے ڈیڑھ سوجوہری ہتھیاراستعمال ہوسکتے ہیں اور سولہ سے چھتیس ٹن کاربن کے سیاہ دھوئیں کا اخراج ہوگا۔

سیکورٹی رپورٹ  کے مطابق جوہری جنگ سے زمین کے درجہ حرارت میں 2 سے 5  ڈگری کمی جبکہ سورج کی روشنی میں 20  سے 35 فیصد کمی آئے گی اورزمین پر پیداواری صلاحیت 15  سے30  فیصد کم ہوجائے گی۔

رپورٹ کے مطابق 2019 میں پاکستان میں دہشت گرد حملوں میں نمایاں کمی آئی ہے۔

مزید پڑھیں : ہیروشیما اور ناگاساکی کے بعد کشمیر پر جوہری جنگ چھڑسکتی ہے

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ افغانستان میں سلامتی کی صورتحال غیر مستحکم ہے جبکہ پلوامہ حملے کے بعد بھارت اور پاکستان کے مابین کشیدگی بڑھی ہوئی ہے۔

یاد رہے گذشتہ سالامریکی تھنک ٹینک نے کشمیرکواندرون معاملہ قرار دینے والوں کو وارننگ دیتے ہوئے کہا تھا مسئلہ کشمیرپرجنوبی ایشیا میں جوہری جنگ کا خطرہ ہے، جوہری جنگ ہوئی تولاکھوں افرادجان سےجائیں گے۔

تھنک ٹینک اسٹرٹ فورکی رپورٹ میں کہا گیا تھاہیروشیماناگاساکی کےبعدکشمیرپرجوہری جنگ چھڑسکتی ہے ، بعض بین الاقوامی قوتیں مسئلہ کشمیرکواندرونی معاملہ قراردے رہی ہیں، یہ اندرونی معاملہ نہیں، دنیا کے امن واستحکام کا معاملہ ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں