The news is by your side.

Advertisement

انڈونیشیا میں سیلاب نے تباہی مچادی، ہلاکتوں کی تعداد 88 ہوگئی

جکارتہ: انڈونیشیا میں سیلاب نے تباہی مچادی، نظام زندگی درہم برہم ہوگیا جبکہ ہلاکتوں کی تعداد 88 تک پہنچ گئی۔

تفصیلات کے مطابق انڈونیشیا کے صوبے پاپوا میں سیلاب نے نظام زندگی مفلوج کردیا، درجنوں افراد اب بھی لاپتہ ہیں جن کی تلاش جاری ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ پاپوا کے کئی علاقے زیرآب ہیں، جبکہ ریسکیو عملے کی جانب سے امدادی کارروائیاں بھی جاری ہیں، حکام نے مزید ہلاکتوں کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔

انڈونیشیا کے متاثرہ علاقوں میں پندہ دن کے لیے ایمرجنسی نافذ کردی گئی، جبکہ تقریباﹰ چھ ہزار آٹھ سو افراد کو عارضی کیمپوں میں منتقل کر دیا گیا ہے۔

انڈونیشیا میں بارشوں کے موسمی طوفانوں کے باعث مٹی کے تودے گرنے اور سیلاب آنے کے واقعات کثرت سے پیش آتے ہیں، قبل ازیں متعدد واقعات میں سینکڑوں شہری مارے جاچکے ہیں۔

17000 جزیروں پر مشتمل ملک انڈونیشیا جہاں لاکھوں افراد ان پہاڑی سلسلوں کے قریب رہتے ہیں جہاں کثرت سے سیلاب آتے ہیں، اور نظام زندگی درہم برہم ہوجاتے ہیں۔

یاد رہے کہ رواں سال جنوری میں انڈونیشیا کے علاقے سیلوویسی میں شدید بارشوں، سیلاب اور لینڈ سلائیڈنگ کے نتیجے میں 59 افراد ہلاک جبکہ ہزاروں افراد بے گھر ہوگئے تھے۔

انڈونیشیا میں سیلاب نے تباہی مچادی، 59 افراد ہلاک 25 لاپتہ

قبل ازیں گزشتہ برس دسمبر کے اختتام پر انڈونیشیا کے آبنائے سنڈا میں سونامی کی لہریں ساحل سے ٹکرا گئیں جس کے نتیجے میں 429 افراد ہلاک اور 1600 زائد افراد زخمی ہوئے تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں