The news is by your side.

Advertisement

انڈونیشیا میں روزے داروں کو سحری میں جگانے کیلئے جنگی طیاروں کا استعمال

جکارتہ : انڈونیشیا میں مسلمانوں کو سحری میں جگانے کے لیےجنگی طیاروں کا استعمال کیا جاتا ہے، ترجمان انڈونیشی فضائیہ کا کہنا ہے ہمارے ہوا باز رات کے وقت پروازوں کی خصوصی مہارت حاصل کئے ہوئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق انڈونیشیا میں جنگی طیارے روزے داروں کو سحری کیلئے جگاتے ہیں ، جزیرہ جاوا میں آبادی کے اوپر جنگی طیارے چلی پروازیں کر کے رمضان بھر سحری کیلئے جگانے کا کام انجام دیتے ہیں، ان کے شور سے لوگ نیند سے بیدار ہو جاتے ہیں ۔

فجر سے قبل مسلمانوں کو سحری کیلئے جگانے کی ذمہ داری انڈونیشی فضائیہ کی ہے، انڈونیشی فضائیہ کے ترجمان سوس یوریس نے بتایا کہ ہمارے ہوا باز رات کے وقت پروازوں کی خصوصی مہارت حاصل کئے ہوئے ہیں، انہیں صبح 10 بجے کے بعد روزے کی حالت میں طیارے اڑانے کی اجازت نہیں ہوتی۔

ترجمان نے مزید بتایا کہ برسہا برس سے ہمارے یہاں یہ روایت چلی آرہی ہے ، اس روایت کو زندہ رکھنے کا مقصد انڈونیشیا کی عوام اور فضائیہ کے تعلق کو مضبوط بنائے رکھنا ہے ۔

انہوں نے اعتراف کیا کہ بہت سارے لوگ ایسے بھی ہیں جو سحری کی خاطر جگانے کیلئے طیاروں کے شور کو پسند نہیں کرتے ۔

خیال رہے انڈونیشیا ایشیاء کے جنوب مشرق میں واقع مسلم دنیا کا سب سے بڑا ملک ہے، یہ 17508جزائر پر مشتمل ہے ، آبادی کے لحاظ سے یہ دنیا کا چوتھا بڑا اور مسلم آبادی کے حوالے سے دنیا کا سب سے بڑا ملک مانا جاتا ہے ۔

جزیرہ جاوا میں انڈونیشیا کی 50فیصد سے زیادہ آبادی بسی ہوئی ہے، یہ آسیان گروپ کا بانی ملک جی20کا رکن ہے جبکہ قوت خرید کے لحاظ سے دنیا کا 15واں اور مجموعی قومی اعتبار سے بین الاقوامی اقتصادی طاقت مانا جاتا ہے ۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں