The news is by your side.

Advertisement

سینئراینکر پرسن اقرار الحسن پر تشدد ، ابتدائی میڈیکل رپورٹ سامنے آگئی

کراچی: سینئراینکرپرسن اقرارالحسن پر تشدد کے واقعے کی ابتدائی میڈیکل رپورٹ سامنے آگئی، جس میں بتایا گیا ہے کہ اقرار الحسن کے منہ پرمسلسل تھپڑ مارےگئے اور سر پر بھی شدید چوٹ آئی۔

تفصیلات کے مطابق اے آروائی نیوز کے سینئراینکرپرسن اقرارالحسن پر تشدد کی ابتدائی میڈیکل رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ اقرار الحسن کو رات10بجکر57منٹ پرعباسی اسپتال ایمرجنسی لایاگیا، اسپتال میں ڈاکٹرز کی ٹیم کی جانب سے مکمل معائنہ کیا۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ رپورٹ کے پہلے حصے میں اقرار الحسن پر تشدد کا بتایا گیا، اقرار الحسن کے منہ پر مسلسل تھپڑ مارے گئے اور ان کو دیوار پر دے مارا۔

میڈیکل رپورٹ کےدوسرے حصے میں جسمانی چوٹوں کا ذکر کیا گیا ، جس میں بتایا گیا ہے کہ اقرار الحسن کے سر پر شدید چوٹ آئی، ان کے زخموں پر ٹانکے لگائے گئے، ان کے سر پر چوٹ بٹ لگنے کی وجہ سےآئی۔

میڈیکل رپورٹ کے تیسرے حصے میں فوری طبی امداد کا ذکر کیا گیا ، جس میں کہا گیا ہے کہ ایمرجنسی رپورٹ کے بعد میڈیکولیگل افسر کو ریفر کیا گیا، میڈیکولیگل رپورٹ آنے کے بعد مزید صورتحال واضح ہوگی۔

یاد رہے آئی بی کے رشوت خور افسرکے خلاف اے آر وائی نیوز کے پروگرام سرعام کی ٹیم نے اسٹنگ آپریشن کیا ، اقراء الحسن اپنی ٹیم کے ہمراہ ثبوت کے ساتھ شکایت کیلیے آئی بی آفس پہنچے تو آئی بی افسران نے پوری ٹیم کو ہی یرغمال بنالیا۔

آئی بی افسران نے ٹیم سرعام کو برہنہ کر کے بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا، وزیراعظم ہاؤس نے معاملے کا فوری نوٹس لیتےہوئےآئی بی ڈائریکٹرسید رضوان شاہ سمیت پانچ افسران کو معطل کردیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں