The news is by your side.

Advertisement

ایم کیو ایم اور حکومتی وفد کی ملاقات کی اندرونی کہانی سامنے آگئی

کراچی: ایم کیو ایم پاکستان اور حکومتی وفد کے درمیان ہونے والی ملاقات کی اندرونی کہانی سامنے آگئی۔

تفصیلات کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان اور حکومتی وفد کے درمیان ہونے والی ملاقات بے سود اور صرف یقین دہانیوں اور پرانے وعدوں تک ہی محدود رہی۔

ایم کیو ایم کا کہنا ہے کہ تحریک انصاف کی جانب سے سنجیدگی کا مظاہرہ نہیں کیا جارہا ہے، ورکنگ ریلیشن شپ کا دارومدار اب صرف تحریری معاہدے پر عمل ہے۔

ایم کیو ایم پاکستان نے دوبارہ دونوں تحریری معاہدے کی کاپیاں اسد عمر کو دے دیں، اسد عمر نے ایم کیو ایم وفد کو یقین دہانی کرائی کہ وزیراعظم عمران خان سے مل کر تحفظات سامنے رکھوں گا۔

مزید پڑھیں: کراچی کو جو حق دہائیوں سے نہیں ملا وہ دلانا ہے،اسد عمر

ایم کیو ایم پاکستان کا کہنا ہے کہ واضح بتادیا ہے کہ کابینہ میں شامل نہیں ہوں گے، تحریک انصاف کی خواہش ہے کہ وہ جس کو چاہے وزارت دیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومتی وفد اور ایم کیو ایم کے درمیان ہونے والی ملاقات میں میئر کراچی اور ڈپٹی کنوینر غیر حاضر رہے۔

واضح رہے کہ وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمر کا کہنا تھا کہ کراچی کو جو حق دہائیوں سے نہیں ملا وہ دلانا ہے، کوشش ہے کہ ساتھ مل کر کراچی کے لیے کام کریں۔

یاد رہے کہ وفاقی وزیر اسد عمر کی سربراہی میں تحریک انصاف کا وفد ایم کیو ایم کو منانے میں ناکام ہوگیا، خالد مقبول صدیقی کا کہنا تھا کہ کابینہ میں نہیں بیٹھیں گے لیکن حکومت سے تعاون جاری رہے گا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں