The news is by your side.

Advertisement

وزیراعظم کی ارکان قومی اسمبلی سے ملاقات کی اندرونی کہانی سامنے آگئی

اسلام آباد : ارکان قومی اسمبلی نے وزیراعظم عمران خان پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے عثمان بزدار سے متعلق شکوے کئے اور یقین دلایا عدم اعتماد ناکام بنانے کیلئےہم آپ کا ڈٹ کر ساتھ دیں گے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان سے گزشتہ روز پی ٹی آئی ارکان قومی اسمبلی سے ملاقات کا احوال سامنے آگیا ، ذرائع کا کہنا ہے کہ ارکان قومی اسمبلی نے وزیراعظم پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے عثمان بزدار سے متعلق شکوے کئے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ تحریک انصاف کے کچھ ارکان وزیراعلیٰ عثمان بزدار کی کارکردگی پر نالاں ہے اور وزیراعظم سے ملاقات میں عثمان بزدار پر تحفظات کا اظہار بھی کیا ہے۔

ذرائع کے مطابق ارکان نے کہا صوبے میں بیڈ گوررننس سے حکومت کو پریشانی ہے، جس پر وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پنجاب پر گہری نظر ہے، سب کچھ علم میں ہے۔

ملاقات میں ارکان نے یقین دہانی کرائی ہے کہ عدم اعتماد ناکام بنانے کیلئےہم آپ کا ڈٹ کر ساتھ دیں گے، جس پر وزیراعظم نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا تحریک عدم اعتماد پر اپوزیشن کو بدترین شکست دیں گے۔

ذرائع نے کہا ہے کہ اکثریتی اراکین کی حمایت کے باوجود بعض ارکان کے تحفظات تاحال برقرار ہے ، بعض ارکان اپنے حلقوں میں غیر ضروری مداخلت پر نالاں ہیں۔

نور عالم خان کو حکومت کے خلاف مسلسل بیان بازی مہنگی پڑی ، نور عالم خان حکومتی فنڈزصرف صوابی میں خرچ کرنےپر نالاں تھے، وہ اپنے حلقے کے لیے ترقیاتی فنڈز مانگتے رہے جو نہیں ملے اور پارٹی کے شوکاز نوٹس اورپی اے سی سے نکالنابڑی ناراضی کی وجہ بنا۔

ذرائع کے مطابق اسی طرح طاہر صادق بھی حلقے میں حکومتی شخصیات کی مداخلت پرنالاں ہیں، وزیراعظم کو شکایت کے باوجود حلقے میں مداخلت نہیں رکی۔

غلام بی بی بھروانا کو پہلے روز سے ہی شک کےدائرےمیں رکھا گیا جبکہ بعض اراکین پارٹی میں عزت نہ ملنے پر بھی ناراض ہیں اور عامر لیاقت حسین بھی کوئی حکومتی عہدہ نہ ملنے پر مایوس ہوئے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں