معروف عراقی ماڈل تارا فریس بغداد میں قتل instagaram model tara fares
The news is by your side.

Advertisement

معروف عراقی ماڈل تارا فریس بغداد میں قتل

بغداد: معروف عراقی ماڈل اور سوشل میڈیا سپراسٹار تارا فریس کو نامعلوم افراد نے گولیاں مار کر قتل کردیا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق معروف ماڈل تارا فریس کو بغداد میں قتل کیا گیا، عراقی ماڈل نے حال ہی عراق میں سب سے مقبول سوشل میڈیا اسٹار ہونے کا اعزاز اپنے نام کیا تھا۔

عراقی وزارت دفاع کے مطابق 22 سالہ ماڈل تارا فریس کو نامعلوم افراد نے قتل کیا ہے جس کی تحقیقات کی جارہی ہیں، خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ ماڈل کو داعش کے جنگجوؤں نے قتل کیا ہے۔

عراقی وزارت دفاع کا کہنا تھا کہ داعش کے جنگجو شکست کے باوجود ابھی تک کارروائیاں کررہے ہیں، اس سے قبل رواں ماہ فیشن انڈسٹری اور خواتین کے حقوق سے وابستہ ایک اور سماجی کارکن سوعد ال علی کو بھی قتل کردیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ عراقی ماڈل تارا فریس کے سوشل میڈیا سائٹ انسٹاگرام پر 2 ملین سے زائد فالوورز تھے اور وہ اپنا زیادہ تر وقت ملک سے باہر گزارتی تھیں۔

سوشل میڈیا صارفین نے تارا فریس کے قتل کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہوسکتا ہے کہ انہیں ان کے لائف اسٹائل کی وجہ سے قتل کیا گیا ہو، وہ مختلف کلر کے بالوں اور نت نئے ڈیزائن کے ملبوسات کے ساتھ تصاویر شیئر کرتی تھیں۔

View this post on Instagram

يـم دارگم 🦋🌿🍃🌱

A post shared by Tara Fares | تاره فارس (@its.tarafares) on

ایک اور صارف کا کہنا ہے کہ میرے لیے یہ بہت ہی افسردہ خبر ہے کہ ایک نوجوان ماڈل کو اس طرح قتل کردیا گیا ہے، تارا فریس زندگی سے لطف اندوز ہونے والی ماڈل تھیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں