The news is by your side.

Advertisement

حساس اداروں نے را کے سہولت کاروں کا کراچی میں سراغ لگا لیا

کراچی : پاکستان کے حساس اداروں نے بھارتی خفیہ ایجنسی را کے سہولت کاروں کا پاکستان میں سراغ لگا لیا۔

تفصیلات کے مطابق را کراچی میں دہشتگردی کی کاروائیوں کو انجام دنیے کے لئے محمود صدیقی اور خلیل بہرامی کو استعمال کرتی ہے۔

بھارتی خفیہ ایجنسی کے دونوں ایجنٹس پہلے جنوبی افریقہ اور ملائیشیا سے آپریٹ کر رہے تھے اب ان کو بھارت منتقل کردیا گیا ہے، اور وہاں سے دونوں بھارتی خفیہ ایجنسی کے ایجنٹوں کا منظم نیٹ ورک پاکستان میں چلا رہے ہیں.

پاکستان کے حساس اداروں نے محمود صدیقی اور خلیل بہرامی کے حوالے سے قانونی دستاویزات حاصل کر لی ہیں۔

را کے دونوں سہولت کاروں کی حالیہ تصاویر اے آروائی نیوز نے حاصل کر لی ہیں۔

اس سے قبل راہ کے ایجنت کلبھوشن یادیو کو بلوچستان سے گرفتار کیاگیا تھا.

بھارتی ایجنٹ کلبھوشن یادیو کو 25 مارچ کو بلوچستان میں حساس اداروں کی جانب سے مارے کئے چھاپے میں گرفتار کیا گیا تھا، جبکہ پاکستانی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا تھا کہ کلبھوشن یادیو غیر قانونی طور پر پاکستان میں داخل ہوا تھا، اور پاکستان میں تخریبی کاروائیوں میں ملوث تھا۔

اسی طرح بلوچستان، پاکستان کا سب سے بڑا صوبہ ہونے کے ساتھ ساتھ کم ترقی یافتہ ہے، گذشتہ کئی سالوں سے بھارت کی جانب سے پاکستان میں دہشتگردی کو فروغ دیا جارہاہے،جسے پاکستان کی فوج کی طرف سے منظر عام پر لایا گیا ہے.

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں