The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں غیر ملکی لا فرمز کھولنے کی اجازت دے دی گئی

ریاض: سعودی عرب میں غیر ملکی لا فرمز کھولنے کی اجازت دے دی گئی، حکومت نے اس کے لیے کچھ شرائط و ہدایات جاری کی ہیں۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق سعودی حکومت کی جانب سے قانون وکالت کے اجرا کے 20 برس بعد ترامیم کے باعث مملکت میں غیر ملکی لا فرمز کھولنے کی اجازت حاصل ہوگئی، حکومت نے اس کے لیے 6 شرائط مقرر کی ہیں۔

ترمیم شدہ قانون وکالت کا مسودہ 34 دفعات پر مشتمل ہے، اس کے بموجب غیر ملکی لا فرمز مندرجہ ذیل شرائط پوری کرنے پر کھولی جاسکتی ہیں۔

غیر ملکی لا فرم منفرد عالمی شہرت کی مالک ہو۔

مملکت میں اپنی برانچ کھولنے کی امیدوار لا فرم کا اپنا لائسنس مؤثر ہو۔

غیر ملکی لا فرم کو اپنے شعبے میں کم از کم دس سال کا تجربہ ہو۔

امیدوار لا فرم کم از کم 3 مختلف ممالک یا کسی ایک ملک کے پانچ صوبوں میں اپنی دفاتر قائم کیے ہوئے ہو بشرطیکہ صوبوں کے قوانین ایک دوسرے سے مختلف ہوں۔

لا فرم کے سعودی عرب میں کم از کم 2 نمائندے ہوں اور وہ مملکت کے اقامہ ضوابط کے پابند ہوں۔

غیر ملکی لا فرم کو لائسنس فیس جمع کروانا ہوگی، تجدید مقررہ لائحہ عمل کے مطابق ہوگی۔ لائسنس کی درخواست مسترد ہونے پر فیس واپس کردی جائے گی۔

سعودی ماہرین قانون نے کہا ہے کہ سعودی کابینہ نے غیر ملکی لا فرمز مملکت میں کھولنے کی اجازت مقامی قانون دانوں اور ملکی لا فرمز کا معیار بلند کرنے کی غرض سے دی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں