The news is by your side.

Advertisement

برطانیہ میں زیر تعلیم انٹرنیشنل اسٹوڈنٹس کا کرونا کی صورت حال میں اہم مطالبہ

لندن: برطانیہ میں زیر تعلیم انٹرنیشنل اسٹوڈنٹس نے کرونا وائرس کی وبا کی صورت حال میں مطالبہ کیا ہے کہ ان کی فیسیں منجمد کی جائیں۔

تفصیلات کے مطابق لاک ڈاؤن میں بھی برطانوی یونی ورسٹی نے انٹرنیشنل اسٹوڈنٹس سے فیسوں کا مطالبہ کر دیا ہے، دوسری طرف جانب طلبہ نے شکوہ کیا ہے کہ لاک ڈاؤن کے دوران وہ یونی ورسٹی کی سہولیات سے محروم رہے ہیں۔

طلبہ کا مؤقف ہے کہ وبا کے دوران حکومت نے 3 ماہ کے لیے کرائے اور اقساط منجمد کر دی تھیں، لاک ڈاؤن کے باعث طلبہ ساڑھے تین ماہ کام بھی نہیں کر سکے، ہزاروں پاؤنڈز فیس ادا کی مگر پڑھائی آن لائن کرتے رہے، اس لیے اب ان کی فیس منجمد کی جائے۔

طلبہ نے فیس منجمد کرنے کے لیے پارلیمنٹ کی ویب سائٹ پر پٹیشن بھی دائر کر دی ہے، جس پر 10 ہزار کے قریب افراد نے دستخط کر دیے۔

واضح رہے کہ برطانیہ کی بروک یونی ورسٹی وبا کے دوران بھی مسلسل بین الاقوامی طلبہ کے لیے اپنے ٹیوشن فیس کے ڈھانچے میں موجود شرائط پر عمل درآمد جاری رکھے ہوئے ہے، فیسوں میں کوئی کمی واقع نہیں ہوئی، بلکہ وبائی صورت حال کے دوران انڈر گریڈ طلبہ کے لیے اوسطاً 5 فی صد اور گریڈ طلبہ کے لیے اوسطاً 7 فی صد کا اضافہ کیا گیا۔

دوسری طرف اگر سب نہیں تو زیادہ تر کورسز آن لائن پڑھائے جا رہے ہیں، اور یہ بات سبھی جانتے ہیں کہ آن لائن کورسز پر لاگت بہت کم آتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں