The news is by your side.

Advertisement

غیرملکی ریسلر کراچی میں گھر خریدنے اور رہائش کے خواہش مند

کراچی: معروف انٹرنیشنل ریسلر ٹائنی آئرن نے شہر قائد میں مکان خریدنے کی خواہش کا اظہار کردیا، غیر ملکی ریسلرز نے پان کھا کر عوام سے محبت کا ثبوت بھی دیا۔

تفصیلات کے مطابق رنگ آف پاکستان کا دوسرا ایڈیشن آئندہ ماہ کراچی اور اسلام آباد میں منعقد کیا جائے گا جس میں بین الاقوامی خواتین اور مرد ریسلرز اپنے کھیل کا مظاہرہ پیش کریں گے۔

غیرملکی پروفیشنل ریسلرز اور خصوصاً خواتین کھلاڑیوں کی پاکستان آمد سے ملک کا مثبت امیج دنیا کے سامنے جاریا ہے، پہلے ایڈیشن میں شرکت کرنے والے کھلاڑیوں نے دوبارہ پاکستان آمد پر مسرت کا اظہار کیا۔

رنگ آف پاکستان کی لانچنگ تقریب کراچی میں منعقد ہوئی جس میں انٹرنیشنل ریسلرز کا تعارف کروا گیا، برطانوی ریسلر بریم جو ورلڈ ریسلنگ انٹرٹینمنٹ ڈبلیو ڈبلیو ای نیکسٹ میں بطور ٹیگ ٹیم صلاحیتوں کے جوہر دکھاچکے ہیں وہ اب پاکستان اوربالخصوص کراچی آنے پر کافی خوش ہیں۔

اس موقع پر امریکی ریسلر ٹائنی آئرن نے اے آر وائی سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وہ کراچی میں پانچ کمروں کا گھر خریدنے کے خواہش مند ہیں اور اُن کی دلی خواہش یہ کہ اُن کے ہمسائے ملنسار ہوں تاکہ وہ لسی پی سکیں اور بچوں کو ریسلنگ کے گُر بھی سکھائیں۔

بریم (تھامس ریمنڈ لاٹیمر) کا کہنا تھا کہ میرے لیے پاکستان اور بالخصوص کراچی آنا اعزاز کی بات ہے کیونکہ سیکیورٹی رسک کے حوالے سے بہت سی باتیں سُنی تھیں جو بالکل غلط ثابت ہوئیں۔

اُن کا کہنا تھا کہ پاکستانی بہت محبت کرنے والے لوگ ہیں،یہاں ریسلنگ کے چاہنے والوں کی کمی نہیں جو خوشی کی بات ہے۔ بریم نے بتایا کہ انھیں آم بہت پسند ہے جبکہ پان کھانے کا تجربہ ان کے لیے منفرد ثابت ہوا۔ بین الاقوامی ریسلر کا کہنا تھا کہ پان کا ذائقہ تھوڑا تیز تھا مگر آئندہ جب بھی موقع ملا وہ اسے دوبارہ ضرور کھائیں گے۔

برطانوی ریسلر کا کہنا تھا کہ رنگ آف پاکستان نے پروفیشنل ریسلرز کو شائقین کے سامنے لانے کا بہترین موقع فراہم کیا، اب ضرورت اس امر کی ہے کہ  ہماری حوصلہ افزائی کے لیے بڑی تعداد میں لوگ آئیں اور میگا ایونٹ کو کامیاب بنائیں۔

برطانوی ریسلر ٹائنی آئرن جو مسلسل پاکستان کا دورہ کرنے کیلئے بے تاب رہتے ہیں اور اب انہیں پاکستانیوں سے کافی محبت ہوگئی ہے، گزشتہ برس جب وہ پاکستان آئے تو ہر محفل میں انھوں نے قیمہ اور لسی کا ذکر تھا چھیڑا تھا۔

کراچی میں منعقد ہونے والی تقریب کے دوران ٹائنی آئرن نے حاضرین کے سامنے میٹھا پان کھایا اور ثابت کیا کہ وہ پاکستانیوں جیسا ذوق بھی رکھتے ہیں۔

اے آر وائی نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے ٹائنی آئرن کا کہنا تھا کہ انھوں نے کافی سارے پان پیک کروا لیے ہیں جو وہ برطانیہ میں اپنے دوستوں اور اہل خانہ کو کھلانے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

واضح رہے کہ ٹائنی آئرن کو برطانیہ میں جسامت کے لحاظ سے انکریڈیبل ہلک کا لقب مل چکا ہے۔

پاکستانی نژاد فرانسیسی ریسلر بادشاہ پہلوان خان ایڈیشن ون کے چیمپیئن رہے انہوں نے اے آر وائی کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ میرے دورے کا مقصد پاکستان میں پروفیشنل ریسلنگ اکیڈمی کا قیام ہے ۔

انھوں نے بتایا کہ کراچی میں غیر معیاری ریسلنگ کے مقابلوں کی ہوا چل پڑی ہے جس میں شامل ہونے والے ریسلرز غیر تربیتی یافتہ ہیں، اس کی وجہ سے آرگنائزرز نوجوانوں کی جانوں سے بھی کھیل رہے ہیں۔

بادشاہ پہلوا ن کا کہنا تھا کہ کوئی بھی شخص ٹی وی میں مقابلے دیکھ کر ریسلر نہیں بن سکتا بلکہ اس کے لیے پروفیشنل ٹرینر (استاد) سے تربیت حاصل کرنا بہت ضروری ہے۔

خیال رہے کہ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے تعاون سے پروفیشنل ریسلنگ کا میلہ اگلے ماہ اگست میں کراچی اور اسلام آباد میں سجے گا جس میں بین الاقوامی شہرت یافتہ ریسلرز کنگ آف دی رنگ بنے کے لیے ایکشن میں دکھائی دیں گے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں