The news is by your side.

ملک بھر میں اسلامی بینکنگ نظام متعارف کروایا جائے، عمران خان کی ہدایت

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے ملک بھر میں اسلامی بینکنگ نظام متعارف کروانے کی ہدایت جاری کردی۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت ملکی معیشت سےمتعلق اہم اجلاس ہوا جس میں وزیرخزانہ اسد عمر، گورنر اسٹیٹ بینک، سیکریٹری خزانہ اور وزیراعظم کے معاونِ خصوصی اشفاق حسین سمیت اقتصادی ماہرین نے شرکت کی۔

اجلاس میں ملک کی اقتصادی صورت حال سے متعلق ایکشن پلان پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

گورنر اسٹیٹ بینک نے دورانِ اجلاس وزیراعظم کو بریفنگ دی کہ پاکستان بینکنگ سہولتوں سےسب سےکم استفادہ کرنے والاملک ہے کیونکہ صرف 16 فیصد آبادی بینکنگ سہولیات استعمال کررہی جن میں 11 فیصد خواتین بھی شامل ہیں۔ انہوں نے آگاہ کیا کہ عوام کی کثیر تعدادمذہبی رجحان کی وجہ سے بینکنگ نظام سے دور رہنے کو ترجیح دیتے ہیں۔

گورنر اسٹیٹ بینک نے بریفنگ دی کہ آئندہ5سال کیلئےجامع پلان بنایاجارہا ہے جس کے تحت اسلامک بینکنگ اورڈیجیٹل پیمنٹ کوفروغ دیاجائےگا۔

اُن کا کہنا تھا کہ ’5سالہ منصوبہ بندی کےتحت 30لاکھ روزگارکےمواقع پیدا کیے جاسکیں گے جبکہ ایس ایم ای نظام کےتحت  5 کھرب ڈالرکی ایکسپورٹس بھی بڑھے گی‘۔ گورنر اسٹیٹ بینک نے آگاہ کیا کہ ’کمرشل اورمائیکرو فنانس بینکنگ پرکام تیزکیا جائےگا‘۔

  وزیراعظم نے قومی اقتصادی حکمت عملی کے 5 سالہ منصوبہ بندی کی منظوری دیتے ہوئے کہا کہ ’اقتصادی استحکام کے ذریعے غربت پر قابو پانے میں مدد ملے گی‘۔

اُن کا کہنا تھا کہ ملک کےاقتصادی نظام کی مضبوطی کیلئے اہم فیصلے کرنا ہوں گے، اسلامک بینکنگ نظام کی وجہ سے زراعت جیسےشعبوں کوبھی ترقی ملےگی۔

وزیر اعظم نے بیکنگ اصلاحات کے لیے پیش کیے گئے پروگرام کی تعریف کرتے ہوئے پانچ سالہ منصوبہ بندی پر جلد عملدرآمد شروع کرنے کی ہدایت بھی کی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں