The news is by your side.

Advertisement

ایران میں گرفتار خاتون روسی صحافی دو ہفتے بعد رہا

یولیا یوزک کو اسرائیل کےلیے کام کرنے کے الزام میں حراست میں لیا گیا تھا

تہران :ایران نے روسی صحافی یولیا یوزک کو رہا کردیا, یوزک کو ایرانی حکام نے دو ہفتے قبل تہران پہنچنے پر حراست میں لیا۔

تفصیلات کے مطابق ایران کے دارالحکومت تہران میں واقع روسی سفارت خانے کی طرف سے جاری ایک بیان میں یولیا یوزک کی رہائی کی تصدیق کی ہے۔

سفارتخانے نے مزید کہا کہ روسی وزارت خارجہ اور تہران میں روسی سفارت خانے کی مشترکہ کوششوں کے نتیجے میں ایران نے روسی شہری یولیا یوزک کی رہائی کا فیصلہ کیا۔

سفارتخانے کے مطابق یوزک واپس ماسکو پہنچ گئی ہیں۔

اس سے قبل تہران میں روسی سفارتخانے نے اعلان کیا تھا کہ پاسداران انقلاب نے ہوائی اڈے پر پہنچنے پر یوزک کو گرفتار کرلیا تھا۔

فارسی میں نشریات پیش کرنے والے امریکی ریڈیو کے مطابق یوزک کواسرائیلی انٹیلی جنس کےساتھ تعاون کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔

غیرملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ یولیا یوزک نے چند سال پہلے تہران میں ایک رپورٹر کی حیثیت سے کام کیا تھا۔

روسی صحافی بورس ووچیچکوسکی جو یوزیک کے ساتھی ہیں نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ فیس بک پرلکھا کہ یوزیک کو ایرانی حکام کی طرف سے باقاعدہ دعوت دے کر بلایا گیا، جب وہ تہران پہنچی تو اس کا پاسپورٹ یہ کہہ کر لے لیا کہ واپسی پراسے دے دیا جائے گا مگر شام کو ایرانی پولیس نے ہوٹل پر چھاپہ مار کر یوزیک کو حراست میں لے لیا۔

خبر کے مطابق گرفتاری کے بعد یوزیک کی ماسکو میں موجود اس کے اہل خانہ سے ایک منٹ کی بات کرائی گئی تھی اس کے بعد اس سے رابطہ منطقع ہے۔

اہل خانہ کا کہنا تھا کہ جب ان کا یوزیک کے ساتھ رابطہ ہوا تووہ جیل کے سیل میں فرش پر بیٹھی ہوئی تھی، اس کے بعد اس کے ساتھ کوئی رابطہ نہیں ہوسکا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں