The news is by your side.

Advertisement

ایران ایٹمی معاہدے سے منحرف نہ ہو، فرانس

پیرس : فرانس کی وزارت خارجہ کی ترجمان نے کہا ہے کہ ایران کو نئے مرحلے میں ایسے اقدامات سے گریز کرنا چاہیے جن سے کشیدگی میں اضافہ ہوسکتا ہو۔

تفصیلات کے مطابق فرانس نے ایران کو خبردار کیا ہے کہ وہ جوہری سمجھوتے سے مزید انحراف نہ کرے اور ایسے کام نہ کرے جو بالخصوص مزید تشویش کا سبب بن سکتے ہوں ۔

فرانس کی وزارت خارجہ کی خاتون ترجمان ایجنس وان دیر موہل نے پیرس میں روزانہ کی بریفنگ میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایران کو نئے مرحلے میں ایسے اقدامات سے گریز کرنا چاہیے جن سے کشیدگی میں اضافہ ہوسکتا ہو۔

وہ ایرانی صدر حسن روحانی کے اس اعلان کا جواب دے رہی تھیں جس میں انھوں نے کہا ہے کہ ایران یورینیم افزودگی کے لیے ایڈوانس آئی آر -9 پر کام کررہا ہے،یہ سینٹری فیوجز 2015ء میں ایران اور چھے عالمی طاقتوں کے درمیان طے شدہ جوہری سمجھوتے میں شامل نہیں تھے۔

صدر حسن روحانی نے سوموار کو یہ بھی کہا تھا کہ جب تک یورپی یونین اس سمجھوتے کے تحت اپنے وعدوں کوپورا نہیں کرتی ہے اس وقت تک ایران جوہری سمجھوتے کے تقاضوں سے انحراف کا سلسلہ جاری رکھے گا۔

ایران مئی کے بعد سے اس جوہری سمجھوتے کی متعدد شرائط کی پاسداری نہ کرنے کا اعلان کرچکا ہے اور اس نے ان کی خلاف ورزی کرتے ہوئے یورینیم کو اعلی ٰ سطح پر افزودہ کرنا شروع کردیا ہے۔

ایرانی صدر نے سرکاری ٹیلی ویڑن سے نشر کیے گئے بیان میں یہ بھی کہا تھا کہ ایران یورینیم کو افزودہ کرنے کے لیے زیادہ ایڈوانس سینٹری فیوجز پر کام شروع کردے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں