The news is by your side.

Advertisement

ایران حملے سے امریکی فوجیوں کو دماغی چوٹیں آئیں، پینٹاگون کی تصدیق

واشنگٹن: پینٹاگون نے تصدیق کی ہے کہ ایران کے جوابی حملے کے نتیجے میں 30 سے زائد امریکی فوجی اہلکار اس قدر دباؤ کا شکار ہوئے کہ ان کا دماغی بری طرح‌ سے متاثر ہوا۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹ کے مطابق عراق میں تعینات تیس سے زائد امریکی فوجیوں کا خوف کی وجہ سے دماغ بری طرح سے متاثر ہوا، جس کے بعد انہیں مسلسل سردرد کی شکایت ہے۔

امریکی صدر ٹرمپ نے بدھ کے روز گفتگو کرتے ہوئے اس بات کی تصدیق کی کہ “میں نے سُنا ہے کہ انہیں مسلسل شدید سردرد ہے، میری نظر میں وہ زیادہ زخمی نہیں ہوئے بس اُن کے دماغ متاثر ہوئے”۔

پینٹاگون کی جانب سے جاری ہونے والے اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ رواں ماہ عراق میں ہونے والے ایرانی حملے کے بعد سے اب تک 34 ایسے فوجی اہلکار سامنے آئے جن کے دماغ بری طرح‌ سے متاثر ہوئے۔

مزید پڑھیں: ایرانی حملے کا خوفناک منظر ناقابل بیان ہے، امریکی فوجی

یہ بھی پڑھیں: امریکی فوجی حکام کا ایرانی میزائل حملے سے متعلق بڑا اعتراف

پینٹاگون کی جانب سے جاری اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ 817 اہلکار جرمنی جبکہ 16 عراق اور ایک کویت میں زیر علاج ہے، تمام اہلکاروں کو صحت یاب ہونے کے بعد امریکا واپس بلا لیا جائے گا۔

یاد رہے کہ عراق کے دارالحکومت بغداد میں امریکی ڈرون نے ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کو ٹارگٹ کیا تھا جس کے نتیجے میں وہ موقع پر ہی جاں بحق ہوگئے تھے۔ اگلے روز ہی ایران کی جانب سے بھرپور جواب دیا گیا جس کے نتیجے میں امریکا کو مالی نقصان کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں