The news is by your side.

Advertisement

ایرانی وزیرخارجہ جواد ظریف پاکستان پہنچ گئے

اسلام آباد: ایران کے وزیر خارجہ دو روزہ سرکاری دورے پر پاکستان پہنچ گئے، جواد ظریف اپنے دورہ پاکستان میں کل سےباقاعدہ ملاقاتوں کا آغاز کریں گے۔

سفارتی ذرائع کے مطابق پاکستان پہنچنے پر نور خان ایئربیس پر ایڈیشنل سیکریٹری اے آئی ٹی ، ایرانی سفیر سید محمد حسینی نے معزز مہمان کا استقبال کیا، اس موقع پر ایرانی سفارتخانے اور وزارت خارجہ حکام بھی موجود تھے۔

سفارتی ذرائع کا کہنا ہے کہ ایرانی وزیرخارجہ کے ہمراہ اعلیٰ سطح کا سیاسی واقتصادی وفد بھی اسلام آباد پہنچا ہے، ایران کے نمائندہ خصوصی برائےافغانستان محمدابراہیم طاہریان بھی وفد میں شامل ہیں۔

ترجمان دفترخارجہ کے مطابق ایرانی وزیر خارجہ دورہ پاکستان میں کل سے باقاعدہ ملاقاتوں کا آغاز کریں گے، جواد ظریف کل پاکستان صدر عارف علوی،وزیر اعظم عمران خان سے ملاقاتیں کرینگے، اس کے علاوہ ایرانی وزیر خارجہ کل وزیرخارجہ شاہ محمود سے وفود کی سطح پر مذاکرات کرینگے۔Pakistan, Iran mull joint war on Covid-19سفارتی ذرائع کے مطابق جواد ظریف کل آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے بھی ملاقات کرینگے، اس کے علاوہ ایرانی وزیر خارجہ کل شام انسٹی ٹیوٹ آف اسٹریٹیجک اسٹڈیز میں لیکچر دینگے۔

سفارتی ذرائع کے مطابق ایرانی وزیرخارجہ ملاقاتوں میں پاک ایران باہمی تعلقات پربات چیت کریں گے، ملاقاتوں میں امریکی صدارتی انتخاب، آئی پی گیس پائپ لائن پر بھی گفتگو کی جائےگی ساتھ ہی افغان امن عمل، پاک ایران اقتصادی تعلقات پر تبادلہ خیال ہوگا اس کے علاوہ پاک ایران سرحدی انتظامی امور، غیرقانونی منشیات وانسانی اسمگلنگ پر بھی بات ہوگی۔

یاد رہے رواں ماہ کے آغاز میں  وزیراعظم عمران خان نے ترک صدر سے ٹیلیفونک رابطہ کیا تھا ، جس مٰں دونوں رہنماؤں کے درمیان پاکستان میں مدرسے پر دہشت گرد حملے پر تبادلہ خیال کیا گیا، وزیراعظم نے قدرتی آفت سے متاثرہ افراد کی جلد صحت یابی کے لیے دعا کی۔

مزید پڑھیں : وزیراعظم کا ترک صدر سے رابطہ، یورپ میں اسلاموفوبیا کی بڑھتی لہر پر اظہار تشویش

دونوں رہنماؤں کے درمیان یورپ میں اسلامو فوبیا کی بڑھتی لہرپر تشویش کا اظہار کیا گیا، عمران خان نے کہا  تھا کہ مسلمانوں کے خلاف نفرت، انتہاپسندی کے بڑھتے رجحان کو روکنا ہوگا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ پاکستانی عوام ترک بہن بھائیوں کے دکھ میں برابر کی شریک ہے، مشکل کی اس گھڑی میں ترک عوام کے ساتھ کھڑے ہیں، 2005 کے زلزلے میں ترکی نے پاکستان کی بھرپور مدد کی، غم کی اس گھڑی میں ترکی کو ہر ممکن مدد کی پیشکش کرتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  ایران دنیا کے ساتھ تعمیری رابطےکاحامی ہے،صدر حسن روحانی

وزیراعظم نے کہا کہ مسلم امہ کے رہنما حضورﷺ سے مسلمانوں کی محبت کی وضاحت کریں، مغرب میں ہولوکاسٹ سے متعلق قوانین موجود ہیں، مغرب کو دنیا بھر کے مسلمانوں کے جذبات کا احترام کرنا ہوگا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں