The news is by your side.

Advertisement

غیر ملکی قرضوں میں کمی آئی ہے، اسحاق ڈار

اسلام آباد : وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ رواں مالی سال کے پہلے 6 ماہ میں محصولات کی وصولی میں 125 ارب کی کمی کا سامنا ہے۔

یہ بات انہوں نے فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری (ایف پی سی سی آئی) میں صنعت کاروں سے خطاب میں کہی انہوں نےبتایا کہ مشرف دور میں قرضہ دگنا ہوگیا تھا جب کہ پیپلزپارٹی کے گزشتہ دور میں قرضہ ساڑھے چھ ٹریلین سے پندرہ ٹریلین تک پہنچ گیا تھا۔

وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے فخریہ انداز میں کہا کہ ہمارے دورِ حکومت میں قرض کی صورت حال بہت بہتر ہوئی ہے، اور ملک ترقی کی شاہراہ پر گامزن ہوچکا ہے یہی وجہ کہ بیرون ملک سے بھی سرمایہ کاری پاکستان آ رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ کراچی سرکلر کو سی پیک میں شامل کر کے حکومت نے کراچی سے خصوصی توجہ کو ظاہر کیا ہے جس کی تکمیل کے بعد ملک کا معاشی حب مزید مستحکم اور خوشحال ہوگا جس کے باعث ہزاروں لوگوں کو روزگار ملے گا۔

قبل ازیں ایف پی سی سی آئی کے صدر زبیر طفیل نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کی جانب سے َٹیکسٹائل پیکیج پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ پیکیج کی بدولت بر آمدات میں اضافہ ہو گا۔

اس موقع پر انہوں نے تجویز دی کہ اب بر آمدکنندگان کو بھی ٹیکسٹائل سہولت سے فائدہ اٹھانے کی ضرورت ہے تا کہ ایکسپورٹ ٹارگٹ کا حصول ممکن ہو سکے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں