site
stats
بزنس

دال کے بجائے مرغی کھائیں،اسحاق ڈار کی منطق

اسلام آباد: آج قومی اسمبلی میں ہونے والے اجلاس میں دال ماش کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے سے متعلق ایک سوال کے جواب میں وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کا کہنا ہے اگر دال مہنگی ہے تو مرغی کا گوشت کھائیں وہ سستا کردیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی میں آئندہ مالی سال کے لئے پیش کئے گئے بجٹ میں شامل لازمی اخراجات کی منظوری کے دوران اسحاق ڈار نے اپوزیشن رکن قومی اسمبلی نے دال ماش کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے کے سوال وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے مشورہ دے ڈالا کہ اگر دال مہنگی ہے تو مرغی کا گوشت کھالیں، ہم نے مرغی کا گوشت 200 روپے کلو سستا کردیا ہے.

بجٹ کی منظوری کے لیے بلائے گئے قومی اسمبلی کے اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا کہ حکومت مالیاتی خسارے میں کمی پر خصوصی توجہ دے رہی ہے،جس کے باعث مالیاتی خسارہ نصف رہ گیا ہے،اس سلسلے میں ہم نے 34 میں 32 اداروں کے خفیہ فنڈ ختم کر دیے ہیں اب صرف انٹیلی جینس اداروں کے علاوہ کوئی خفیہ فنڈ استعمال نہیں کر سکتا اور ترقیاتی بجٹ میں 2 گنا اضافہ کردیا ہے.

ایک سوال کے جواب میں وفاقی وزیر خزانہ نے واضح کیا کہ اٹھارویں ترمیم کے بعد صوبے خسارے میں جاسکتے ہیں اس لیے رواں مالی سال میں 3 صوبوں کے خسارے کے بجٹ پیش کرنا غیر قانونی نہیں ہے۔

وزیرخزانہ کا کہنا تھا کہ کشکول لے کر نگر نگر گھومنے کی روایت موجودہ حکومت نہیں ڈالی اس لیے 2000 سے 2013 تک لئے گئے قرضوں کے حوالے سے پرویز مشرف ، (ق) لیگ اور پیپلز پارٹی سے بھی پوچھا جائے جو بھی قرضے لئے جاتے ہیں اس میں پارلیمنٹ کی منظوری شامل ہوتی ہے۔

ایک موقع پر اسحاق ڈار نے مشورہ دیا کہ شیخ رشید جلد شادی کرلیں تاکہ انہیں بچوں کی ضروریات کے بارے میں علم ہوسکے۔ وہ شیخ رشید کو چیلنج کرتے ہیں اگر بیرون ملک ان کا ایک روپیہ بھی ثابت ہوجائے تو سیاست چھوڑ دیں گے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ افغانستان سے معاملات پر حکومت باخبر ہے، طورخم بارڈر پر اب تک جو بھی ہوا ہے وہ اچھا شگون نہیں۔ آپریشن ضرب عضب پر اب تک 145 ارب روپے خرچ ہوچکے ہیں جبکہ 100 ارب مزید رکھے جارہے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top