site
stats
عالمی خبریں

داعش نے 19 یزیدی خواتین کو زندہ جلا دیا

بغداد: شدت پسند تنظیم داعش کے زیر قبضہ علاقہ موصل میں 19 یزیدی خواتین کو زندہ جلا دیا گیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق ان خواتین نے داعشی جنگجوؤں سے جنسی تعلق قائم کرنے سے انکار کیا تھا جس پر جنگجوؤں نے انہیں لوہے کے پنجروں میں بند کر کے زندہ جلا دیا۔

عینی شاہدین کے مطابق ان خواتین کو سرعام جلایا گیا اور سینکڑوں لوگ وہاں کھڑے دیکھتے رہے۔ کوئی انہیں بچانے کے لیے کچھ نہ کر سکا۔

isis-2

واضح رہے کہ اگست 2014 میں داعش نے شمال مغربی عراق کے شہر سنجار پر حملہ کیا تھا جہاں یزیدیوں کی اکثریت آباد تھی۔ علاقے پر قبضہ کے بعد 1800 یزیدی خواتین داعش کی قید میں آگئی تھیں۔ داعش نے عراق و شام کے مختلف علاقوں سے درجنوں خواتین کو اغوا بھی کیا ہے۔ علاوہ ازیں دنیا بھر سے کئی خواتین داعش میں شمولیت کے لیے شام جا چکی ہیں۔

ان سب خواتین کی حیثیت داعش کے لیے جنسی غلام کی ہے اور ان میں سے کئی خواتین جنگجوؤں کی جانب سے اجتماعی زیادتی کا سامنا بھی کر چکی ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top