The news is by your side.

Advertisement

شرح سود میں کمی حکومتی قرضوں کی ادائیگی آسان بنانا ہے، اسلام آباد چیمبر

اسلام آباد: اسلام آباد چیمبر آف سمال ٹریڈرز کا کہنا ہے کہ مرکزی بینک کی جانب سے شرح سود میں ریکارڈ کمی حکومت کی جانب سے بڑھتے قرضوں کی ادائیگی کو آسان بنانا ہے۔ حقیقی جی ڈی پی 4.2 فیصد سے کم رہے گا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد چیمبر آف سمال ٹریڈرز کے سرپرست شاہد رشید بٹ نے کہا ہے کہ مرکزی بینک کے مطابق جی ڈی پی میں اضافہ توقعات کے برعکس 5.5 فیصد نہیں بلکہ 4.2 فیصد ہوگا۔

اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ مرکزی بینک کی جانب سے شرح سود میں ریکارڈ کمی حکومت کی جانب سے بڑھتے قرضوں کی ادائیگی کو آسان بنانا ہے۔ اسٹیٹ بینک نے شرح سود کو 6 فیصد سے کم کر کے 5.75 فیصد کر دیا ہے جس کا مقصد نجی شعبہ کو سستے قرضوں کی فراہمی کے بجائے حکومتی قرضوں کی ادائیگی کو آسان بنانا ہے۔

شاہد رشید بٹ نے کہا کہ شرح سود میں کمی سے نجی شعبہ کو فائدہ ہوگا، بینکوں کا منافع کم ہو جائے گا جبکہ عوام کی جانب سے بچت کی حوصلہ شکنی ہوگی جس سے معیشت میں نقدی کی مقدار بڑھ جائے گی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں