The news is by your side.

Advertisement

اسلام آباد تشدد کیس: متاثرہ جوڑے نے شادی کرلی، ملزمان جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے

اسلام آباد : لڑکا اور لڑکی کوبرہنہ اور تشدد کیس میں متاثرہ جوڑے نے شادی کرلی جبکہ عدالت نے مرکزی ملزم سمیت 3 ملزمان کو چار روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں لڑکا اور لڑکی کوبرہنہ اور تشدد کیس میں اہم پیشرفت سامنے آئی ، ایس ایس پی انویسٹی گیشن نے بتایا کہ جوڑے نے شادی کرلی، شادی کی تصدیق بیانات ریکارڈ کرانےکےدوران ہوئی۔

گذشتہ روز اسلام آباد ای الیون لڑکا اور لڑکی کو برہنہ اور تشدد کیس وفاقی پولیس نے متاثرہ لڑکے اور لڑکی نے بیانات ریکارڈ کئے تھے، بیانات 161کے تحت بیانات ریکارڈ کئے گئے ہیں۔

پولیس نے بتایا کہ دونوں متاثرین کے بیانات کو تفتیش کا حصہ بنا دیا گیا، متاثرین مکمل تحفظ اور قانونی امداد کی یقین دہانی پر راضی ہوئے، کیس میں ملوث مزید افراد کی گرفتاری کی کوششیں جاری ہے۔

دوسری جانب جوڈیشل مجسٹریٹ نے مرکزی ملزم عثمان مرزا اور تین ساتھیوں کو چار روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا ہے۔

خیال رہے سوشل میڈیا پر اسلام آباد کی ایک ویڈیو وائرل ہوئی تھی ، جس میں چار نوجوانوں کو ایک نوجوان اور لڑکی پر تشدد کرتے دیکھا جاسکتا تھا، ویڈیو وائرل ہونے پر ڈپٹی کمشنر اسلام آباد نے نوٹس لیا۔

اسلام آباد کے ڈپٹی کمشنر حمزہ شفقت نے ایک روز قبل یقین دہانی کرائی تھی کہ مقدمے میں نامزد یا ویڈیو میں نظر آنے والے تمام ملزمان کو گرفتار کرلیا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ عثمان مرزا گاڑیوں کی خرید و فروخت کا کام کرتا ہے، متاثرین کی جانب سے شکایت درج نہ کروانے پر سرکار کی مدعیت میں مقدمہ درج کیا گیا۔

بعد ازاں وزیراعظم عمران خان نے اسلام آباد میں پیش آنے والے واقعے کا نوٹس لے کر آئی جی اسلام آباد سے رابطہ کیا اور انہیں ملوث افراد کو ہر صورت کیفرکردار تک پہنچانے کی ہدایت کی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں