The news is by your side.

Advertisement

لڑکا لڑکی تشدد کیس، عدالت نے ایک ملزم کو رہا کر دیا

اسلام آباد: عدالت نے لڑکے اور لڑکی کے خلاف جنسی تشدد کیس میں ایک ملزم عمر بلال کو رہا کرنے کا حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ میں ای الیون لڑکا لڑکی جنسی تشدد کیس میں بڑی پیش رفت ہوئی ہے، عدالت نے شریک ملزم عمر بلال مروت کو رہا کرنے کا حکم دے دیا۔

عدالت نے شریک ملزم عمر بلال مروت کی درخواست ضمانت بعد از گرفتاری منظور کرتے ہوئے اسے دس دس لاکھ روپے کے دو مچلکے جمع کرانے کا حکم جاری کیا۔

ملزم کی جانب سے شیر افضل مروت جب کہ مدعی کی جانب سے حسن جاوید شورش نے کیس کی پیروی کی، خیال رہے کہ اس کیس میں مرکزی ملزم عثمان مرزا سمیت 7 ملزم اڈیالہ جیل میں قید ہیں۔

لڑکا لڑکی تشدد کیس: عثمان مرزا سمیت دیگر ملزمان کیخلاف 10ستمبر تک چالان جمع کرانے کی ہدایت

جوڈیشل مجسٹریٹ وقار گوندل نے پولیس کو دس ستمبر تک چلان جمع کرانے کا حکم دے رکھا ہے۔

یاد رہے کہ اسلام آباد میں ای الیون کے علاقے میں لڑکے لڑکی کو برہنہ کرکے تشدد کیا گیا تھا، جس کی ویڈیو وائرل ہو گئی تھی، پولیس نے اس پر کارروائی کرتے ہوئے ملزمان کو گرفتار کر لیا تھا۔

6 جولائی کو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیو میں واضح طور پر دیکھا جا سکتا ہے کہ ایک شخص لڑکے اور لڑکی کو تشدد کا نشانہ بنا رہا ہے، جب کہ وہ لڑکے کو مارتے ہوئے مغلظات بھی بک رہا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں