The news is by your side.

Advertisement

‘اسلاموفوبیا مسلمانوں کو دیوار سےلگانےکاباعث بن رہا ہے’

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ اسلام کو دہشتگردی اور انتہاپسندی سےجوڑنا غلط ہے ‏اسلاموفوبیا دنیا میں مسلمانوں کو دیوار سے لگانے کا باعث بن رہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان سےاسلامی ممالک کےسفیروں نے ملاقات کی جس میں ‏اسلاموفوبیا کا مقابلہ کرنے، مذہبی اہم آہنگی کے فروغ سےمتعلق بات چیت کی گئی۔

وزیراعظم کی گزشتہ سال اسلامی ممالک کےحکمرانوں کولکھےگئےخطوط پر بھی گفتگو کی اور ‏اسلاموفوبیا کیخلاف پاکستان کی کوششوں سےآگاہ کیا۔

وزیراعظم عمران خان نے اسلاموفوبیاکیخلاف مشترکہ لائحہ عمل بنانے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ‏اسلاموفوبیا سے متعلق آگاہی پیدا کرنے کی ضرورت ہے۔ وزیراعظم نےسفیروں ‏کواسلاموفوبیاکےتدارک کیلئےکوششوں سےآگاہ کیا۔

ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان دنیامیں مذاہب کےدرمیان ہم آہنگی ‏کاخواہاں ہے لیکن اسلاموفوبیا مذاہب کوتقسیم کرنےکا باعث بن رہاہے، اسلام کو دہشتگردی اور ‏انتہاپسندی سےجوڑنا غلط ہے اسلاموفوبیا دنیا میں مسلمانوں کودیوارسےلگانےکاباعث بن رہاہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ آزادی اظہارکی آڑمیں مقدس شخصیات کی توہین سےتکلیف پہنچتی ہے، اوآئی ‏سی دنیاکو اس کی حساسیت بتانےکیلئےمشترکہ کوششیں کرے، دنیاکوبتاناہوگاکہ ہمارےدلوں میں ‏نبیﷺ،قرآن کاکتنااحترام ہے دنیا بھرکے مذاہب کےمقدسات کوقانونی تحفظ دینےکی ضرورت ہے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ اسلام کاحقیقی تشخص دنیاکوبتانےکیلئےاوآئی سی مشترکہ کوشش کرے، ‏دنیا سے برداشت، احترام اور تعاون پر مبنی تعلقات کیلئےپرعزم ہیں، اسلاموفوبیا کے خلاف متحد ‏ہوکر اس سے نمٹا جائے اور عالمی سطح پر آگاہی پھیلائی جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں