site
stats
عالمی خبریں

امریکا : حماس کے سربراہ عالمی دہشت گرد قرار، سفری پابندی عائد، اثاثہ جات منجمد

اسماعیل ہانیہ سابق وزیر اعظم بھی ہیں

نیویارک : امریکا نے حماس کے سربراہ اور سابق وزیراعظم اسماعیل ہانیہ کا نام بین الااقوامی دہشت گردوں کی فہرست میں شامل کرکے اُن کے اثاثے منجمد اور سفری پابندیاں عائد کردی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ٹرمپ انتظامیہ نے یروشلم کو فلسطین کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے غیر مقبول فیصلے کے بعد فلسطین کی آزادی کے لیے جدوجہد کرنے والی تنظٍیم حماس کے سربراہ اسماعیل ہانیہ کو بین الااقوامی دہشت گردوں کی فہرست میں شامل کرلیا ہے.

غیرملکی میڈیا کے مطابق امریکی محکمہ خارجہ نے اس بات کا اعلان ایک پریس کانفرنس میں کیا جہاں اُن کا کہنا تھا کہ اسماعیل ہانیہ حماس کے ملٹری ونگ کے ساتھ قریبی تعلقات رکھتے ہیں اور مسلح جدوجہد کے پُرجوش حامی بھی ہیں اور متعدد اسرائیلی فوجوں سمیت 17 امریکی شہریوں کے قتل میں ملوث ہیں۔


 یہ بھی پڑھیں : امریکا نے یروشلم کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرلیا


خیال رہے ڈونلڈ ٹرمپ کے برسر اقتدار آنے کے بعد سے فلسطین کے حالات بد سے بدترین ہوتے جارہے ہیں اور اپنے متنازعہ فیصلوں کے باعث امریکا مشرق وسطی میں کشیدگی کا سبب بن رہا ہے جس کا ثبوت یروشلم کو فلسطین کا دارالحکوتم تسلیم کرنے اور حماس کے سربراہ کے خلاف مذکورہ اقدام ہے.

بین الااقوامی سیاست پر گہری مگاہ رکھنے والے تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ واشنگٹن کو اپنی پالیسی پر نظرثانی کرنی ہو گی بہ صورت دیگر مشرق وسطیٰ میں جنگ کی سی کیفیت پیدا ہونے کے امکانات مزید روشن ہو جائیں گے جس کا خمیازہ پوری دنیا کو بھگتنا پڑے گا.


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

loading...

Most Popular

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top