site
stats
اہم ترین

راحیل شریف کو اراضی طریقہ کار کے تحت دی، آئی ایس پی آر

راولپنڈی: پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کا کہنا ہے کہ سابق آرمی چیف کو زرعی اراضی آئینی طریقہ کار کے تحت دی گئی، اس ضمن میں کی جانے والی قیاس آرائیاں ادارے کی کردار کشی کے مترادف ہیں۔

آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری کردہ اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ سابق آرمی چیف کو زرعی اراضی کی الاٹمنٹ سرکاری و فوجی قوانین کے مطابق دی گئی، اس موضوع پر کی جانے والی بحت پاک فوج کی کردارکشی کے مترادف ہے۔

پاک فوج کی جانب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ الاٹمنٹ کے حوالے سے بحث و مباحثہ اور رویہ اداروں کی موجودہ ہم آہنگی کے لیے خطرناک ثابت ہوسکتاہے اور یہ فعل فوج کو بدنام کرنے سمیت ریاستی اداروں میں بد اعتمادی کا موجب بن سکتی ہے۔

آئی ایس آر نے سابق آرمی چیف کو اراضی دینے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ ’’فوجی افسران، جوانوں کو زرعی زمین آئینی طریقہ کار کے تحت دی جاتی ہے تاہم سابق آرمی چیف کی الاٹمنٹ کے حوالے سے کی جانے والی قیاس آرائیاں اداروں میں غلط فہمیاں پیدا کرنے کی کوشش ہے‘‘۔

خیال رہے کہ راحیل شریف کی مدتِ ملازمت گزشتہ سال 29 نومبر کو مکمل ہوگئی تھی جس کے بعد وزیراعظم کی جانب سے نامزد کردہ نئے آرمی چیف جنرل قمر باجوہ نے فوج کی باگ ڈور سنبھالی۔

سابق آرمی چیف کی اراضی الاٹمنٹ کے حوالے سے خبریں گردش تھی اور اس پر طرح طرح کے تبصرے بھی کیے جارہے تھے تاہم اب آئی ایس پی آر کی جانب سے راحیل شریف کو اراضی دینے کی باقاعدہ تصدیق کردی گئی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top