The news is by your side.

Advertisement

مہمند ایجنسی میں دہشت گرد حملہ، 5 افراد جاں بحق

مہمند ایجنسی: فاٹا کے ضلعے مہمند ایجنسی میں لیویز ہیڈ کوارٹر کے مین گیٹ پر خود کش حملے میں 3 سیکیورٹی اہلکاروں سمیت 5 افراد شہید ہوگئے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق مہمند ایجنسی کی تحصیل غلانئی میں 2 خودکش حملہ آوروں نے پولیٹیکل ایڈمنسٹریشن کی رہائشی کالونی میں داخل ہونے کی کوشش کی۔

لیویز اہلکاروں نے حملہ آوروں کو اندر جانے سے روکا، جس پر ایک حملہ آور نے مرکزی گیٹ کے قریب اپنے آپ کو اڑا لیا۔ دھماکے میں 3 خاصہ داروں سمیت 5 افراد شہید ہوگئے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق دوسرے حملہ آور کو سیکیورٹی فورسز نے اسی وقت ہلاک کردیا۔ لیویز ذرائع کے مطابق واقعے میں 3 اہلکار زخمی بھی ہوئے جنہیں اسپتال منتقل کردیا گیا۔

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ افغانستان سے دہشت گردوں کے پاکستان میں داخل ہونے کی اطلاع تھی۔

دھماکےمیں پولیٹکل انتظامیہ کے دفتر کو بھی نقصان پہنچا۔ واقعے کے بعد سیکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے کر سرچ آپریشن شروع کردیا ہے۔

یاد رہے کہ کچھ عرصہ قبل اسی علاقے میں واقع مہمند رائفلز کیمپ پر دہشت گردوں نے حملہ کیا تھا۔ آئی ایس پی آر کے مطابق 4 خود کش حملہ آوروں نے فائرنگ کرتے ہوئے مسجد میں داخل ہونے کی کوشش کی تاہم ایف سی اہلکاروں نے حملہ آوروں کو روکتے ہوئے ہلاک کردیا۔

واقعے میں ایف سی کے 2 اہلکار جاں بحق جبکہ 14 زخمی ہوگئے تھے۔

اس سے قبل ستمبر 2016 میں مہمند ایجنسی کی تحصیل انبار میں مسجد میں خودکش دھماکہ ہوا تھا جس میں 36 افراد جاں بحق ہوگئے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں