The news is by your side.

Advertisement

بلوچستان میں داعش کی قدم جمانےکی کوشش ناکام ، 12 دہشتگرد ہلاک

راولپنڈی : سکیورٹی فورسز نے بلوچستان میں داعش کی قدم جمانے کو شش ناکام بنادی اور ایک کامیاب آپریشن کے ذریعے داعش کیلئے سہولت کاری کرنے والی کالعدم تنظیموں کے 12دہشت گردوں کا ہلاک کردیا ہے۔

ملک بھرمیں آپریشن ردالفساد کامیابی سے جاری ہے ، ڈی جی آئی ایس پی آرمیجر جنرل آصف غفورکے مطابق سکیورٹی فورسزنے کالعدم لشکر جھنگوی العالمی کے دس سے پندرہ دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاعات پر یکم سے تین جون تک بلوچستان کے علاقے مستونگ میں کامیاب آپریشن کیا گیا۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ مستونگ سے 36کلومیٹر جنوب مشرق میں اسپل نگئی میں کوہ سیاہ اور کوہ مرن کے غاروں سمیت دس کلومیٹر کے علاقے میں ہیلی بورن فورس کی مدد سے کارروائی شروع کی گئی۔

میجر جنرل آصف غفور نے بتایا کہ آپریشن کے دوران دو خودکش حملہ آوروں سمیت بارہ خطرناک ترین دہشت گرد مارے گئے، مولانا عبدالغفور حیدری پر حملہ کرنے والوں کے ساتھی بھی ہلاک ہونے والوں میں شامل ہیں۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق فائرنگ کے تبادلے میں سکیورٹی فورسز کے دو افسران سمیت پانچ اہلکار زخمی ہوئے، آپریشن کے دوران غاروں میں سے آئی ای ڈی بنانے کا سامان ، اسلحہ اور گولا بارود کا ذخیرہ برآمد کیا گیا، جن میں پچاس کلوگرام بارودی مواد،تین خودکش جیکٹس، اٹھارہ گرنیڈ اور چھ راکٹ لانچر وں سمیت چار لائٹ مشین گنز،اٹھارہ چھوٹی مشین گن، چار4 اسنائپر اور اڑتیس مواصلاتی روابط کے سیٹ شامل ہیں۔

میجر جنرل آصف غفور کا کہنا تھا کہ یہ دہشت گرد داعش کے ساتھ مواصلاتی رابطے میں تھے اور داعش کو بلوچستان میں قدم جمانے کے لئے سہولت فراہم کررہے تھے، آپریشن کے نتیجے میں داعش کا بلوچستان میں انفراسٹرکچر قائم کرنے سے پہلے تباہ کردیا گیا ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں ۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں