The news is by your side.

Advertisement

اسرائیلی مظالم آشکار کرنے والی فلسطین کی خاتون صحافی گرفتار

یروشلم : صیہونی فورسز نے ظلم و بربریت کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے فلسطین کے تاریخی شہر الخیلیل میں سرچ آپریشن نام پر خاتون صحافی کو گھر سے گرفتار کرکے لے گئے۔

تفصیلات کے مطابق قابض صیہونی ریاست اسرائیل کی فورسز نے مقبوضہ فلسطین کے جنوب میں واقع تاریخی شہر الخلیل کے نواحی علاقے صوریف میں سرچ آپریشن کے بہانے خاتون صحافی اسراء حضر لافی کو حراست میں لے کر نامعلوم مقام پر منتقل کردیا ہے۔

فلسطینی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ صیہونی فورسز کے اہلکار خاتون صحافی کے گھر کا مکمل طور پر محاصرہ کرنے کے بعد گھر میں داخل ہوئے اور گھر میں لوٹ مار اور توڑ پھوڑ کرنے کے بعد حضر لافی کو گرفتار کرلیا۔

فلسطینی میڈیا کا کہنا ہے کہ مذکورہ خاتون مقامی خبرساں و نشریاتی اداروں میں صحافت کے فرائض انجام دے رہی ہیں، صیہونی فورسز سرچ آپریشن کے دوران حضر لافی کا موبائل فون اور لیپ ٹاپ بھی اپنے ساتھ لے گئے۔

یاد رہے ایک ماہ قبل اسرائیلی فورسز کے ہاھتوں گرفتار ہونے والی فلسطینی شاعرہ دارین طاطور کو اسرائیلی ظلم و بربریت کے خلاف اشعار کہنے کے جرم میں 5 قید کی سزا سنائی گئی تھی، صیہونی عدالت نے دارین طاطور پر اشعار کے ذریعے شہریوں کو شدت پسندی پر ابھارنے کا الزام عائد کیا گیا تھا۔

خیال رہے کہ اسرائیلی عدالت میں فلسطینی شاعرہ 36 سالہ دارین طاطور پر عوام کو شدت پسندی پر ابھارنے کے ساتھ ساتھ فلسطین کی آزادی پسند ’اسلامی جہاد‘ سے رابطے کا الزام بھی عائد کیا گیا تھا، اسلامی جہاد کو اسرائیل نے کالعدم قرار دیا ہوا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں