استنبول:نائٹ کلب پر فائرنگ میں ملوث مشتبہ حملہ آورگرفتار -
The news is by your side.

Advertisement

استنبول:نائٹ کلب پر فائرنگ میں ملوث مشتبہ حملہ آورگرفتار

استنبول : ترکی میں سال نو کے آغاز پر نائٹ کلب پر دھاوا بولنے والے مشتبہ حملہ آور کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

ترک میڈیا کے مطابق استنبول میں نائٹ کلب پر فائرنگ کرکے انتالیس افراد کو ہلاک کرنے والے مشتبہ حملہ آور کو پولیس نے گرفتار کرلیا ہے، پولیس حکام کے مطابق حملہ آور کی شناخت سی سی ٹی وی فوٹیج کی مدد سے کی گئی جسے حراست میں لے کر تفتیش شروع کردی گئی ہے۔

ترک میڈیا کے مطابق حملہ کرنے کا ملزم عبد القادر مشا ریپوف ازبک شہری ہے اور داعش سے تعلق رکھتا ہے، تمام ملزمان کو پولیس نے استنبول کے ایک پرتعیش علاقے یورت میں فلیٹ سے گرفتار کیا ، چھاپے میں مشاری پوف کے ساتھ تین خواتین کو بھی گرفتار کیا گیا، جن کا تعلق صومالیہ، سینیگال اور مصر سے ہے۔

ترک میڈیا کا کہنا ہے کہ مبینہ حملہ آور کرغزستان کے شہری کے فلیٹ میں اپنے 4سال کے بیٹے کے ساتھ مقیم تھا۔

یاد رہے کہ  استنبول میں نائٹ کلب پر فائرنگ  کرکے 39 افراد کو ہلاک کرنے والے مبینہ حملہ آور کی ‘سیلفی ویڈیو’ سامنے آئی تھی، ترک ٹیلیویژن پر نشر کی گئی ویڈیو میں دیکھا گیا تھا  کہ مبینہ حملہ آور استنبول کے تقسیم اسکوائر پر موبائل فون کی مدد سے اپنی ویڈیو بنا رہا ہے، تاہم فوری طور پر یہ واضح نہیں ہوسکا کہ یہ ویڈیو رینا نائٹ کلب پر حملے سے قبل بنائی گئی یا اس نے بعد میں اسے ریکارڈ کیا۔


مزید پڑھیں : استنبول میں نائٹ کلب پرحملہ،39افرادہلاک


یاد رہے کہ ترکی کے اہم ترین شہر استنبول میں سال نو کی تقریبات کے موقع پر ایک نائٹ کلب میں مسلح شخص نے گھس کر فائرنگ کردی تھی، جس کے نتیجے میں 39 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہوگئے تھے۔

حملے کی ذمہ داری دہشت گرد تنظیم داعش نے قبول کرنے کا دعویٰ کیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں