The news is by your side.

Advertisement

اٹلی میں سخت اقدامات کے مثبت نتائج آنا شروع، لاک ڈاؤن میں 13 اپریل تک توسیع

روم : اطالوی حکومت نے13 اپریل تک مکمل شٹ ڈاؤن کا فیصلہ کرلیا، اطالوی وزیرصحت کا کہنا ہے کہ اب غلطی کی گنجائش نہیں ہے،عوام آئندہ ہفتے اچھی خبرسنیں گے۔

تفصیلات کے مطابق اٹلی میں کرونا وائرس کی تباہ کاریوں کے باعث لاشوں کے انبار لگ چکے ہیں، دنیا میں کرونا کی جان لیوا وبا کی وجہ سے ہلاکتوں کی تعداد میں اٹلی میں سب سے زیادہ ہے۔

اطالوی حکومت نے تیرہ اپریل تک مکمل شٹ ڈاؤن کا فیصلہ کرلیا ہے ، اطالوی وزیر صحت روبیرتوسپیرنزاکی نے کہا کہاب غلطیوں کی گنجائش نہیں،لہٰذالاک ڈاؤن ختم نہیں کررہے ،سخت اقدامات کےمثبت نتائج آناشروع ہوگئے۔

اطالوی وزیر صحت کا کہنا تھا کہ کورونا کیخلاف لڑائی لمبی ہے لیکن جیت ہماری ہوگئی ،اگلے ہفتے عوام کو بہت بڑی خوشخبری سننے کو ملے گی۔

یاد رہے اٹلی کے وزیراعظم نے قوم سے پر اعتماد انداز اور درد بھرے لہجے میں خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ ہم صورتحال پر کڑی نظر رکھے ہوئے ہیں اور مقامی کونسلز کےلیے 40 کروڑ یورو کا فنڈ بھی مختص کرنے والے ہیں۔

انہوں نے خوشی کی نوید سناتے ہوئے کہا تھا کہ آج کرونا وائرس سے صحتیاب ہونے والوں کی تعداد میں اضافہ دیکھنے کو ملا ہے، آئندہ ہفتے ماہرین سے ملاقات میں مزید اچھی خبریں سننے کو ملیں گی۔

واضح رہے دنیابھرمیں کوروناوائرس سےہلاکتوں کی تعداد48289 ہوگئی ہے، 9 لاکھ 46 ہزارسےزائد افراد متاثرہیں جبکہ کورونا وائرس سے صحت یاب مریضوں کی تعداددو لاکھ تین سو سترہ ہوگئی ہے۔

اٹلی میں اب تک 13 ہزار 155 افراد ہلاک ہوچکے ہیں جبکہ ایک لاکھ 10 ہزار 574 متاثر ہیں, صرف گزشتہ 24 گھنٹوں میں 837 افراد جان سے گئے۔

خیال رہے اٹلی میں صورتحال چین سے زیادہ بدتر ہوگئی ہے، کرونا وائرس کے باعث لاشوں کے انبار لگ گئے جبکہ اسپتالوں میں بستر اور قبرستانوں میں دفنانے کیلئے جگہ نہ بچی، اطالوی نرسوں کا کہنا ہے تھک گئے ہیں، اب مزید لاشیں نہیں گن سکتے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں