The news is by your side.

Advertisement

چینی اسکینڈل کیس : جہانگیر ترین اور علی ترین نے ضمانتیں کروالیں

لاہور: ٕچینی اسکینڈل کیس اور منی لانڈرنگ کیس میں جہانگیر ترین اور علی ترین نے ضمانتیں کروالیں، جہانگیر ترین نے کہا تمام اثاثے ڈکلئیر ہیں ہم ثابت کریں گے کہ مقدمات بے بنیاد ہیں۔

تفصیلات کے مطابق چینی اسکینڈل اور منی لانڈرنگ کیس میں جہانگیر ترین اور علی ترین کی عبوری ضمانتوں کی درخواستوں پرسماعت ہوئی، جہانگیر ترین اور علی ترین اپنے وکلا کے ہمراہ عدالت میں پیش ہوئے۔

جہانگیر ترین کے وکلا نے دلاٸل دیے کہ مقدمات بےبنیاد ہیں وہ شامل تفتیش ہو کر اپنی بے گناہی ثابت کرنا چاہتے ہیں لہذا عدالت ضمانت منظور کرے ۔

ایڈیشنل سیشن جج حامد حسین نے جہانگیر ترین اور علی ترین کی دس اپریل تک عبوری ضمانت منظور کرتے ایک ایک لاکھ کے مچلکے جمع کروانے کی ہدایت کردی۔

دوسری جانب بینکنگ کورٹ نے منی لانڈرنگ کیس میں جہانگیر ترین اور علی ترین کی عبوری ضمانتیں سات اپریل تک منظور کرتے ہوٸے پانچ پانچ لاکھ کے مچلکے جمع کروانے کا حکم دیا اور ایف آئی اے سے جواب طلب کرلئے۔

سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوٸے جہانگیر ترین نے کہا کہ تینوں ایف آئی آرزسے میرا کوئی تعلق نہیں ، 10سال پہلے کی چیزیں جو کمپنی نے کیں اور فیصلے کیے ان کو چیلنج کیا جارہا ہے، یہ ایف آئی کا کام نہیں کہ کمپنی کے فیصلوں کی تحقیقات کرے یہ ایف بی آر اور ایس ایس ای سی پی کا کام ہے ۔ ایف آئی اے نے منی لانڈرنگ کا ایک لفظ جان بوجھ کر شامل کر کے تحقیقات شروع کیں ۔

انہوں نے کہا کہ صرف میری مل کا کیس کیوں اچھالا جا رہا ہے باقی 80 ملیں بھی ہیں ، عزت اللہ کے ہاتھ میں ہے کسی انسان کے ہاتھ میں نہیں ، مقابلہ کرنا ہے تو عدالتوں میں آٸیں اوچھے ہتھکنڈے استعمال نہ کریں ، تمام اثاثے ڈکلئیر ہیں ہم ثابت کریں گے کہ مقدمات بے بنیاد ہیں اور ہم سرخرو ہوں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں