The news is by your side.

Advertisement

شوگر اسکینڈل : جہانگیر ترین کی عبوری ضمانت میں11جون تک توسیع

لاہور : تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین کے خلاف شوگر اسکینڈل اور منی لانڈرنگ مقدمات کی سماعت کے موقع پر سیشن کورٹ نے جہانگیر اور علی ترین کی عبوری ضمانت میں11جون تک توسیع کردی۔

جہانگیر ترین اپنے ہم خیال گروپ کے اراکین ہمراہ سیش کورٹ میں پیش ہوئے، جسٹس حامد حسین نے سماعت کے دوران جہانگیرترین اور علی ترین کی درخواست ضمانت پر کی عبوری ضمانت میں11جون تک توسیع کردی۔

جسٹس حامد حسین کا کہنا تھا کہ پچھلے دنوں میں کچھ تقرری و تبادلے ہوئے ہیں نئے جج آج چارج لیں گے، اس لیے کیس کو بغیر سماعت ملتوی کررہے ہیں۔

جج نے استفسار کیا کہ پچھلے15دن میں آیف آئی اے نے کیا تحقیقات کی ہیں، جس پر ڈپٹی ڈائریکٹر ایف آئی اے نے بتایا کہ ادارے کے ایک آفیسر کا ٹرانسفر ہوگیا ہے۔

جسٹس حامد حسین نے کہا کہ یہ معاملہ کب سے چل رہا ہے اب تک تحقیقات کیوں مکمل نہیں کی گئیں اگر آپ کا ادارہ تفتیش نہیں کرنا چاہتا تو بتائے ڈپٹی ڈائریکٹر ایف آئی اے نے کہا کہ ہم کیس پرحتمی دلائل کیلئے تیار ہیں۔

عدالت میں پیشی سے قبل ترین ہم خیال گروپ کا جہانگیرترین کی رہائش گاہ پر اجلاس ہوا، اجلاس میں نذیرچوہان پر مقدمے سے متعلق گفتگو کی گئی، اس گفتگو میں گروپ اراکین کو جہانگیرترین پر کیسز پر بھی بریفنگ دی گئی۔

اجلاس کے دوران جہانگیر ترین نے تمام ہم خیال اراکین کو ہدایت کی کہ نذیرچوہان کیخلاف ہونے والا مقدمہ بھرپوراندازمیں لڑا جائے،
ذرائع کے مطابق جہانگیر ترین نے فی الحال اراکین کو سخت رویہ اختیار کرنے سے روک دیا ہے۔

واضح رہے کہ وزیرِاعظم عمران خان کے معاونِ خصوصی برائے احتساب اور مشیرِ داخلہ شہزاد اکبر کی درخواست پر جہانگیر ترین گروپ کے ممبر صوبائی اسمبلی پنجاب نذیر چوہان کے خلاف لاہور میں ہتکِ عزت مقدمہ درج ہو چکا ہے۔

شہزاد اکبر نے 20 مئی کو تھانہ ریس کورس میں درخواست دائر کی تھی جس میں مؤقف اختیار کیا گیا تھا کہ نذیر چوہان نے ایک نیوز چینل کے پروگرام کے دوران ان پر بے بنیاد الزامات عائد کیے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں