The news is by your side.

جماعت اسلامی کا الیکشن کمیشن کے باہر دھرنے کا اعلان

جماعت اسلامی نے بلدیاتی انتخابات ملتوی کرنے کے خلاف جمعہ کے روز الیکشن کمیشن کے باہر دھرنا دینے کا اعلان کر دیا۔

کراچی میں احتجاجی دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے حافظ نعیم الرحمان نے کہا کہ جماعت اسلامی آئینی جمہوری اور قانونی طور پر بلدیاتی انتخابات ملتوی کرنے کے خلاف زبردست تحریک چلائیں گے جمعہ کے روز الیکشن کمیشن سندھ کے دفتر کے باہر تاریخی دھرنا دیں گے اور بلدیاتی انتخابات کروانے پر مجبور کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ ہم سپریم کورٹ میں الیکشن کمیشن اور سندھ حکومت پر توہین عدالت کا کیس بھی دائر کریں گے جماعت اسلامی کی حق دو کراچی تحریک جاری رہے گی کارکنان عوامی رابطہ مہم مزید تیزی سے بڑھائیں۔

امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ آج کراچی کے عوام کی رائے تبدیل ہوئی ہے تو یہ جماعتیں الیکشن کمیشن کو یرغمال بنارہے ہیں سندھ حکومت سن لے کہ عوام کا طوفان نہیں رہ سکتے، 24 جولائی کو بلدیاتی انتخابات ملتوی کیے تو جماعت اسلامی نے احتجاج کیا ہر گزرتے دن تک جماعت اسلامی کے ووٹرز میں اضافہ ہورہا ہے حکمران جماعتیں جماعت اسلامی کی بڑھتی ہوئی مقبولیت سے خوف زدہ ہورہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ کراچی کے عوام بنیادی ضروریات سے محروم ہیں، مائیں بہنیں چنگ چی رکشوں پر سفر کرنے پر مجبور ہیں حکومت اور حکمران طبقہ بتائے کہ وہ کس سے خوف زدہ ہیں بلدیاتی انتخابات کیوں ملتوی کردیے امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق اندرون سندھ کے عوام کے درمیان موجود ہیں جب کہ وزیراعظم شہباز شریف اور وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ خراب موسم کے باعث اندرون سندھ کے عوام کے پاس تک نہیں گئے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں