The news is by your side.

Advertisement

حق دو کراچی کو! جماعت اسلامی اب کہاں دھرنا دینے جارہی ہے؟

کراچی: سندھ کے متنازع بلدیاتی قانون کےخلاف جماعت اسلامی کا سندھ اسمبلی کے باہر احتجاجی دھرنا انیسویں روز بھی جاری ہے تاہم اب نیا اعلان کردیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ اسمبلی کے باہر دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمان نے کہا کہ ہم نے کسی بھی سیاسی جماعت سے بڑی ریلی شارع فیصل پر نکالی جس کا نتیجہ یہ نکلا ہے کہ شہر بھر میں دھرنےکےاثرات پھیل رہےہیں ، ریلیاں نکل رہی ہیں اور ہر گزرتےدن کےساتھ دھرنا ایک مرکزبنتاجارہاہے۔

یہ بھی پڑھیں: مولاناہدایت الرحمان کا دھرنے اور کوسٹل ہائی وے بند کرنے کا اعلان

اس موقع پر حافظ نعیم الرحمان نے اعلان کیا کہ 20تاریخ کو حسن اسکوائر پر دھرنا دیں گے اور بتائیں گے کہ ہمیں حق سے محروم کرنے والےجمہوریت کا راگ الاپنےوالےہی ہیں، حکومت سندھ کےرویےسےلوگ احساس محروم کا شکارہو رہےہیں، ہم عوامی شعوربیدار کرکےاپناحق واپس لیناچاہتےہیں۔

ایک سوال کے جواب میں امیر جماعت اسلامی کراچی کا کہنا تھا کہ مذاکرات میں تعطل حکومت سندھ ہی رکھے ہوئےہے، ہمارا مطالبہ ہے کہ کراچی کو اس 18ویں ترمیم کےبعد اس کاحصہ دیا جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں