The news is by your side.

Advertisement

جماعت اسلامی کا دھرنا جاری، بلدیاتی ایکٹ ہائیکورٹ میں چیلنج

جماعت اسلامی نے سندھ لوکل گورنمنٹ ایکٹ کو سندھ ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا۔

امیرجماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمان نے سندھ لوکل گورنمنٹ ایکٹ کے خلاف سندھ ‏ہائیکورٹ سے رجوع کر لیا۔ ان کا کہنا ہے کہ لوکل باڈیز ایکٹ غیرآئینی ہے جعلی مردم شماری کی ‏گئی۔

جماعت اسلامی کا بلدیاتی بل کے خلاف سندھ اسمبلی کے باہر دھرنے کا چوتھا روز ہے جس میں ‏آج خواتین سیشن رکھا گیا۔ دھرنے میں بڑی تعداد میں خواتین نے شرکت کی۔

شرکاء سے خطاب میں حافظ نعیم الرحمان نے کہا کہ خواتین نے آج اس دھرنے میں شرکت کرکے ‏مزید تقویت دی اس شہر کی بربادی پر اب تو کراچی کی خواتین بھی نکل آئی ہیں اس شہر میں ‏خواتین کو بھی مسائل درپیش ہیں آج یہی خواتین جماعت اسلامی کی آواز بن رہی ہیں پاکستان کی ‏ترقی کی بنیاد کراچی ہے آج پاکستان قرض دار ہے لیکن ایک وقت تھا کہ پاکستان قرضے دیا کرتا ‏تھا۔

انہوں نے کہا کہ اس شہر کی بیٹیاں بچیاں ٹرانسپورٹ نہ ہونے کی وجہ سے تکلیف میں ہیں ‏یونیورسٹی کالجز بسوں میں لٹک کر جاتی ہیں کتنی ہی معصوم بیٹیاں ٹریفک حادثات میں چلی گئی ‏کس کی گردن پر خون ہوگا ان کا، مراد علی شاہ اپنی اہلیہ اور وزرا کی بیگمات کو ذرا چنگچی کا ‏سفر تو کرائیں پھر ہڈیوں کا ٹیسٹ کرائیں تاکہ پتہ چلے کہ آپ اس شہر اور صوبے کی ماؤں بہنوں ‏کے ساتھ کیا سلوک کررہے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں