جامعہ بنوریہ عالمیہ کراچی میں امریکی نوجوان نے اسلام قبول کرلیا -
The news is by your side.

Advertisement

جامعہ بنوریہ عالمیہ کراچی میں امریکی نوجوان نے اسلام قبول کرلیا

اسلام سے بڑھ کر انسانیت کی تعلیم کسی اور مذہب نے نہیں دی ہے، مفتی محمد نعیم

کراچی : جامعہ بنوریہ عالمیہ سائٹ ایریا میں گیبرئیل زبالوس نامی امریکی نوجوان نے عیسائیت سے تائب ہوکر رئیس و شیخ الحدیث مفتی محمد نعیم کے ہاتھ پر اسلام قبول کرلیا۔

گزشتہ روز امریکی ریاست ہوسٹن ٹیکساس کے21سالہ نوجوان گیبرئیل زبالوس نے جامعہ بنوریہ سائٹ آکر قبول اسلام کی خواہش کا اظہار کیا جس پر ایک پروقار تقریب منعقد کی گئی، جس میں نومسلم کو رئیس وشیخ الحدیث مفتی محمد نعیم نے کلمہ پڑھا کر   اسلامی نام جبرائیل تجویز کیا۔

حاضرین مجلس نے خوشی کا اظہار کرتے ہوئے نعرہ تکبیر بلند کیا اور نومسلم پر گل پاشی کرتے ہوئے مبارکباد پیش کی اور استقامت کیلئے خصوصی دعا کی گئی۔

اس موقع پر نومسلم کو بنیادی ارکان اسلام کے بارے میں رہنمائی کرتے ہوئے رئیس وشیخ الحدیث مفتی محمدنعیم نے کہا کہ اسلام میں جس طرح اللہ کی وحدانیت اور فرشتوں کا اقرار لازم ہے اسی طرح قرآن پاک اورحضور صلی اللہ علیہ وسلم کو آخری نبی تسلیم کرنے کا اقرار بھی لازم ہے۔

اللہ تعالیٰ نے عبادات کو اپنے قرب کا ذریعہ بنایا ہے ان کی ادائیگی میں جبر کی اجازت نہیں دی بلکہ ارشاد دین کی تعلیم دی ہے جتنا انسان عابد و زاہد ہوگا اتناہی اللہ کے قریب تر ہوگا۔

دنیا بھر کے مذاہب میں اسلام سے بڑھ کر انسانیت کی تعلیم کسی بھی مذہب نے نہیں دی ہے،یہ واحد مذہب ہے جس میں بگڑی اور بے چین روح کا علاج موجود ہے، یہی وجہ ہے کہ پروپیگنڈوں کے باوجود مغرب میں اسلام تیزی سے پھیل رہاہے۔

اس موقع پر نو مسلم جبرائیل کا کہناتھا کہ میں بہت خوش ہوں اسلام کے مطالعے سے مجھے پتا چلا کہ دنیا میں جو اخلاقیات اور اعمال کا درس اسلام نے دیا ہے وہ کسی بھی مذہب میں موجود نہیں ہے۔

اس لیے میں پاکستان آیا کہ میں اسلام قبول کروں یہاں کے لوگوں کی محبتوں اور شفقتوں نے میرا دل جیت لیا ہے، جب سے اسلام قبول کرنے کا اردہ کیا دل پرسکون ہوگیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں