site
stats
پاکستان

جمشید دستی کو تحفظ دیا جائے ، بہنوں کا چیف جسٹس سے مطالبہ

مظفر گڑھ: زیرحراست رکن قومی اسمبلی جمشید دستی کی کینسر کے مرض میں مبتلا بہن نے کہا ہے کہ روزے میں بھی بھائی کے ساتھ جیل میں بدتمیزی کی گئی، جیل انتظامیہ بھائی پر تشدد کررہی ہے، چیف جسٹس تحفظ فراہم کریں۔

تفصیلات کے مطابق جمشید دستی کی کینسر میں مبتلا مریضہ نے گزشتہ شب 2 بجے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ میں کینسر کے آخری اسٹیج پر ہوں اگر میں فوت ہوگئی تو حکومت بھائی کو جنازے میں شرکت نہیں کرنے دے گی۔

انہوں نے کہا کہ یہ ظالم جاگیردار پہلے بھی میرے بھائی پر ظلم کرتے رہے ہیں، جمشید دستی کو اس سے پہلے بھی حراست میں لیا گیا اور اُن پر تشدد کیا گیا، آج یہ سلوک کیا جارہا ہے کہ میں نے اپنے بھائی کو رکن اسمبلی ہونے کے باوجود ہتھکڑیوں میں دیکھا۔

جمشید دستی کی بہن نے کہا کہ جیسے نوازشریف دو حلقوں سے کامیاب ہوئے ویسے ہی میرا بھائی بھی دو حلقوں سے کامیاب ہوا۔ انہوں نے سوال کیا کہ کیا رکن اسمبلی کے ساتھ ایسا سلوک کیا جاتا ہے؟ ۔

رکن اسمبلی کی ہمشیرہ نے چیف جسٹس سے اپیل کی کہ ہمیں تحفظ دیا جائے اور بھائی کو فوری طور پر رہا کیا جائے، عدالتی احکامات کے باوجود جیل انتظامیہ نے بھائی سے ملاقات نہیں کروائی گئی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top