The news is by your side.

Advertisement

انتظار کی گھڑیاں ختم : جاپانی وزیراعظم نے بڑا اعلان کردیا

ٹوکیو : جاپان نے ملکی معیشت کی بحالی کے لئے کورونا وبا کی وجہ سے عائد کی گئی تمام پابندیاں اور ایمرجنسی ختم کرنے کا اعلان کردیا۔

رپورٹ کے مطابق جاپانی وزیراعظم یوشی ہائیڈے سوگا نے کہا ہے کہ جمعرات سے معمولات زندگی بحال کرنے کے لئے کورونا وائرس کے باعث لگائی گئی تمام پابندیاں بتدریج اٹھا لی جائیں گی۔

جاپان نے کورونا وائرس کے پیش نظر ملک میں عائد پابندیاں اور ایمرجنسی ختم کرنے کا اعلان کردیا ہے، اطلاعات کے مطابق جاپان کی حکومت نے کہا کہ کورونا وائرس کے تناظر میں نافذ ایمرجنسی جمعرات کو ختم ہو جائے گی تاکہ معیشت کو دوبارہ پٹری پر لایا جا سکے۔

جاپان کے وزیر اعظم یوشی ہائیڈے سوگا نے گزشتہ روز اپنے بیان میں کہا ہے کہ ہنگامی حالت جمعرات کو ختم ہو جائے گی اور وائرس کی پابندیوں میں بتدریج نرمی کی جائے گی تاکہ وائرس کی موجودگی کے باوجود روز مرہ کی زندگی دوبارہ شروع ہوسکے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت مزید عارضی کوویڈ 19 علاج کے مراکز قائم کرے گی اور ویکسینیشن جاری رکھے گی تاکہ مستقبل کے کسی بھی پھیلاؤ سے نمٹنے کے لیے تیاری کی جا سکے۔

ہائیڈے سوگا نے کہا کہ سرکاری افسران ویکسین پاسپورٹ اور وائرس کی جانچ پڑتال جیسے دیگر منصوبے بھی شروع کر رہے ہیں۔

انہوں نےکہا کہ حکومت کووڈ 19 کے علاج کےلئے مزید مراکز صحت قائم کرے گی جبکہ ویکسینیشن میں بھی تیزی لائی جائے گی۔اسی طرح ویکسین پاسپورٹ اور مزید وائرس ٹیسٹ متعارف کرائے جائیں گے۔

اس رعایت کے بعد جاپان چھ ماہ سے زائد عرصے میں پہلی بار ہنگامی صورتحال سے مکمل طور پر آزاد ہو جائے گا۔ اپریل سے جاپان میں ایمرجنسی کی موجودہ حالت کو بار بار بڑھایا گیا ہے۔

مذکورہ اقدامات پر عوامی مایوسی کے باوجود جاپان زیادہ محدود لاک ڈاؤن سے بچنے میں کامیاب رہا ہے، اس دوران جاپان میں کوویڈ 19 کے تقریباً 16.9 ملین کیسز اور 17،500 اموات ریکارڈ کئے گئے ہیں۔

یاد رہے جاپان نے  چھ ماہ قبل بھارتی ڈیلٹا ویرئنٹ آنے کے بعد دوبارہ ملک بھر میں ایمرجنسی نافذکردی تھی اور یستوران، بارز مکمل طور پر بند تھے۔ جاپان میں کووڈ 19 کے 1.69 ملین کیسز ریکارڈ کئے گئے تھے جبکہ 17 ہزار 500 ہلاکتیں ہوچکی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں