The news is by your side.

Advertisement

جاپان: کرونا وائرس کی تشخیص کا جدید ترین آلہ ایجاد

ٹوکیو: جاپان کے ماہرین نے ایک ایسا جدید آلہ ایجاد کر لیا ہے جو سانس سے کرونا وائرس کی تشخیص کر سکتا ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق توہوکُو یونی ورسٹی اور حساس پیمائشی آلات تیار کرنے والی ایک جاپانی کمپنی نے ایک ایسا نظام وضع کر لیا ہے جس کی مدد سے کسی بھی شخص کی سانس سے کرونا وائرس کی تشخیص کی جا سکتی ہے۔

مذکورہ دونوں اداروں نے کرونا کے ٹیسٹنگ نظام کے تجرباتی نمونے کی تیاری مکمل کر لی ہے، یہ آلہ 3 حصوں پر مشتمل ہے۔

آلے کا پہلا حصہ تقریباً 5 منٹ تک چھوڑے گئے سانس کو جذب کرتا ہے، دوسرا حصہ سانس میں موجود تمام کرونا وائرس کو غیر فعال بناتے ہوئے وائرس میں موجود پروٹینز حاصل کرتا ہے، جب کہ تیسرے حصے میں پروٹینز کا تجزیہ کیا جاتا ہے۔

یہ آلہ تیار کرنے والے ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ ڈیوائس تقریباً ایک گھنٹے میں نتائج دے سکتی ہے، اس آلے کی کامیاب طبی آزمائش دس متاثرہ افراد پر کی گئی ہے۔

ماہرین کا یہ بھی کہنا ہے کہ چوں کہ اس آلے کی جسامت اس وقت بڑی ہے اس لیے کثیر تعداد میں اس کی تیاری ایک چیلنج ہے، اسے اب چھوٹے سائز میں بنایا جائے گا۔

توہوکُو یونی ورسٹی اسکول آف میڈیسن کے پروفیسر آکائیکے تاکا آکی کا کہنا ہے کہ سانس سے وائرس کی تشخیص کی کوششوں کے حوالے سے کوئی تحقیقی مقالے موجود نہیں ہیں اور اُن کی ٹیکنالوجی غالباً دنیا کی پہلی ایسی ایجاد ہوگی۔

حساس پیمائشی آلات بنانے والی کمپنی شیمادزُو کے صدر کا کہنا تھا کہ یہ نظام نہ صرف لوگوں میں انفیکشن کا سراغ لگا سکتا ہے بلکہ اس کے ذریعے علامات کی شدت سے متعلق بھی معلومات حاصل کی جا سکتی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں