The news is by your side.

Advertisement

جاپانی حکومت کا کورونا فائزر ویکسین سے متعلق اہم فیصلہ

ٹوکیو : امریکی دوا ساز کمپنی “فائزر” کی تیار کردہ کرونا وائرس سے بچاؤ کی ویکسین کی تیسری خوراک کی جاپان میں منظوری دے دی گئی۔

اس حوالے سے جاپان کی وزارت صحت نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ فائزر ویکسین کی تیسری خوراک لگوانے کی منظوری دے دی گئی ہے۔

متعلقہ وزارت نے جمعرات کے روز یہ منظوری دی تھی کہ ویکسین کے دوسرے ٹیکے کو 8 ماہ یا اس سے زائد عرصہ گزرنے کے بعد تیسرا انجکشن لگوایا جا سکتا ہے۔

وزارت صحت کا منصوبہ ہے کہ طبی عملے کو رواں سال دسمبر سے اور عمر رسیدہ شہریوں کو اگلے سال کے پہلے مہینے جنوری سے تیسری خوراک لگانے کا آغاز کیا جائے۔

واضح رہے کہ امریکی کمپنی فائزر کی یہ پہلی ویکسین ہے جسے جاپانی حکومت نے تیسری خوراک کے لیے منظور کیا ہے۔

وزارت صحت اس بات پر بھی غور کر رہی ہے کہ کمپنیوں اور یونیورسٹیوں میں اگلے سال مارچ کے قریب سے موڈرنا ویکسین کی تیسری خوراک بھی لگائی جائے۔

وزارت کا کہنا ہے کہ دو خوراکیں لینے کے بعد ایک سال کے اندر اندر تیسری خوراک قوتِ مدافعت بڑھا سکتی ہے اور کرونا وائرس کی اقسام کے خلاف بھی مددگار ہوسکتی ہے۔

یاد رہے کہ دنیا کے دیگر مختلف ممالک سے سامنے آنے والی تحقیق ظاہر کرتی ہے کہ فائزر اور زیادہ استعمال ہونے والی دیگر ویکسینز کرونا کی نئی قسم ‘ڈیلٹا’ کے خلاف بھی مضبوط تحفظ فراہم کر رہی ہیں۔

زیادہ تر ویکسینز کی دو خوراکیں نہ صرف ڈیلٹا بلکہ کرونا وائرس کی تمام اقسام کے خلاف لڑنے والے اینٹی باڈیز بنانے کے لیے بے حد ضروری ہیں لیکن دنیا کے زیادہ تر حصوں میں اب تک شہریوں کو بچاؤ کے لیے ابتدائی خوراکیں بھی نہیں دی جا سکی ہیں اور عالمی وبا کا پھیلاؤ جاری ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں