The news is by your side.

Advertisement

جاتی امرا سیکیورٹٰی کا معاملہ، عدالت میں درخواست دائر، فل بینچ تشکیل

لاہور: سابق نااہل وزیراعظم کی رہائش گاہ جاتی امرا سے رکاوٹیں ہٹانے کے لیے دائر درخواست کی سماعت کےلیے ہائی کورٹ نے فل بینچ تشکیل دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائی کورٹ نے سابق نااہل وزیراعظم نوازشریف کی رہائش گاہ جاتی امرا سے رکاوٹیں ہٹانے کے لیے دائر درخواست سماعت کے لیے منظور کرتے ہوئے فل بینچ تشکیل دے دیا جو 31 جنوری سے کیس کی پیروی کرے گا۔

لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس شاہد کریم شاہد نے عدالت میں دائر درخواست پر سماعت کرتے ہوئے فل بینچ تشکیل دینے کی سفارش کی جسے چیف جسٹس نے منظور کر لیا اور بینچ کی سربراہی جسٹس امین الدین، جسٹس شاہد کریم اور جسٹس شاہد جمیل کے سپرد کردی۔

درخواست گزار اظہر فاروق نے مؤقف اختیار کیا کہ رائیونڈ میں واقع نوازشریف کی رہائش گاہ کے اطراف رکاوٹیں کھڑی کی گئی ہیں اور  وہاں پر تعینات سیکڑوں اہلکاروں کو قومی خزانے سے ہر ماہ کروڑوں روپے ادا کیے جارہے ہیں۔

مزید پڑھیں: حمزہ شہباز کے گھرکے باہرسے رکاوٹیں فوری ہٹائی جائیں:چیف جسٹس

اظہر فاروق نے عدالت کو آگاہ کیا کہ وزیراعلیٰ پنجاب کے کیمپ آفس، آئی جی آفس کے اردگرد رکاوٹیں کھڑی کر کے علاقے کو نوگو ایریا بنا دیا ہے جس کی وجہ سے عوام کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ ’کسی بھی علاقے کو عوام کی آمد ورفت کے لیے بند کرنا آئین اور بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ہے لہذا عدالت انہیں فوری طور پر ہٹانے کے احکامات جاری کرے جس طرح سپریم کورٹ نے حمزہ شہباز کے گھر کے ارد گرد سے رکاوٹیں ہٹوائیں‘۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں