The news is by your side.

Advertisement

انتخابی نتائج سےمایوس ہو کرقوم کوتباہی کی راہ پرلگادیا، جاوید ہاشمی

ملتان : سینئر سیاستدان مخدوم جاوید ہاشمی نے کہا ہے کہ میرا اور عمران خان کا ڈوپ ٹیسٹ کروا لیا جائے تو سچ کا پتہ چلا جائے گا،انتخابات پر ناکامی سے مایوس ہوکر پوری قوم کو تباہی کی راہ پر لگا دیا۔

وہ ملتان میں میڈیا سے گفتگو کے دوران سربراہ تحریک انصاف عمران خان کے بیان پر ردعمل دے رہے تھے انہوں نے کہا کہ آج کل عمران خان کو ” پلس” بہت یاد آرہا ہے، مجھے اور عمران خان کو قوم کے سامنے بیٹھا کرفیصلہ کرا لینا چاہیے کہ کون سچ بول رہا ہے اور کون دروغ گوئی سے کام لے رہا ہے۔

انہوں نے سربراہ عمران خان کو سخت تنقید کانشانہ بناتے ہوئے کہا کہ عمران خان نے انتخابات میں نتائج سے مایوس ہو کر قوم کو تباہی کے دھانے پر لاکھڑا کیا جب کہ میں نے پہلے ہی بتادیا تھا کہ تحریک انصاف کو 35 سے 40 سیٹیں مل پائیں گی اور پارلیمانی اجلاس میں شاہ محمود قریشی نے بھی اقرار کیا تھا کہ ایک آدھ واقعے کے علاوہ پنجاب میں کوئی دھاندلی نہیں ہوئی ہے۔

اس کے باوجود پوری قوم کو عمومی طور پر اور نوجونوں کو خصوصی طور پر سڑکوں کی خاک چھنوائی گئی جس کا کوئی مثبت نتیجہ نہ نکلنا تھا اور نہ نکلا، یہ بات میں عمران خان کو پہلے ہی بتا چکا تھا جس کی پاداش میں تحریک انصاف سوشل میڈیا ٹیم نے مجھے دو سال تک معتوب کیا۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ” آرمی دھرنے میں ملوث نہیں تھی مگر چند عناصر تھے جو راحیل شریف کو ناکام کرنا چاہتے تھے اور عمران خان کے ذریعے پارلیمانی نظام کو تباہ کرنا چاہتے تھے“

سینیئر سیاست داں جاوید ہاشمی ایک سوال کے جواب میں کہا کہ منصوبہ یہ بتایا گیا تھا کہ طاہر القادری آگے جا کر پارلیمنٹ پر قبضہ کریں گے اور پیچھے پیچھے ہم جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان نے جوڈیشل مارشل لاء کی بات کی تو میں نے مخالفت کی اور پھر اسپتال میں داخل ہو گیا کیونکہ چاہتا تھا کہ تحریک انصاف اور عمران خان کو ایکسپوز نہ کروں۔

واضح رہے دو روز قبل جاوید ہاشمی نے اپنے ایک بیان میں سربراہ تحریک انصاف عمران خان کے حوالے سے کہا تھا کہ عمران خان نے انہیں چیف جسٹس کی مدد سے جوڈیشل مارشل لاء کی خبر دی تھی جس پر عمران خان کا کہنا تھا کہ جاوید ہاشمی کا دماغی توازن درست نہیں،انہوں نے جھوٹ پلس بولا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں