حکومت میں نہ کوئی عہدہ رکھ سکتاہوں اورنا ہی رکھناچاہتا ہوں،جہانگیرترین
The news is by your side.

Advertisement

حکومت میں نہ کوئی عہدہ رکھ سکتاہوں اورنہ ہی رکھناچاہتا ہوں،جہانگیرترین

علی پور : پاکستان تحریک انصاف کے سابق سیکرٹری جنرل جہانگیرترین کا کہنا ہے کہ حکومت میں نہ کوئی عہدہ رکھ سکتا ہوں اور نا ہی رکھناچاہتا ہوں ، جلد ہی ایسے راستے ہموار ہوجائیں گے ہر کوئی محنت کرے گا۔

تفصیلات کے مطابق علی پور میں ساؤتھ پنجاب فشریز پروجیکٹ کی افتتاحی تقریب سے پی ٹی آئی کے سابق سیکرٹری جنرل جہانگیرترین نے خطاب کرتے ہوئے کہا ہمارے ملک میں المیہ ہے، ہم کام میں خود رکاوٹیں پیدا کرتے ہیں ، ہم نے خود پیدا کی گئی رکاوٹوں کو ختم کرنا ہے۔

جہانگیرترین کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی کے پاس ٹیلنٹ ہے، جلد ہی ایسے راستے ہموار ہو جائیں گے ہر کوئی محنت کرے گا، حکومت میں نہ کوئی عہدہ رکھ سکتا ہوں اور نا ہی رکھنا چاہتا ہوں۔

تقریب میں مسلم لیگ ن کے رہنما رانا محمودالحسن بھی موجود تھے۔

رانامحمودالحسن نے جہانگیرترین کو مثبت کام پر پی ٹی آئی کا ساتھ دینے یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ بہتری لانے میں تحریک انصاف کی حکومت کا ساتھ دیں گے۔

رانامحمودالحسن کا کہنا تھا کہ جہانگیرترین کے سیاسی مخالف ہیں لیکن ان کی کاوشوں پر خوش ہیں۔

خیال رہے 15 دسمبر 2017 کو سپریم کورٹ آف پاکستان نے آئین کے آرٹیکل 62 ون ایف کے تحت پی ٹی آئی رہنما جہانگیر ترین کو تاحیات نااہل قرار دیا تھا، جس کے بعد وہ کوئی عوامی عہدہ یا پھر اسمبلی رکنیت رکھنے کے مجاز نہیں رہے مگر پارٹی نے کسی کو بھی ان کی جگہ سیکرٹری جنرل مقرر نہیں کیا تھا۔

تاہم پارٹی کے روز مرہ کے امور کی انجام دہی کے لیے پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان نے مارچ میں ارشد داد کو ایڈیشنل سیکرٹری جنرل مقرر کیا تھا۔

یاد رہے 27 ستمبر کو سپریم کورٹ نے جہانگیر خان ترین کی نااہلی کی نظر ثانی اپیل مسترد کرتے ہوئے نااہلی کا فیصلہ برقرار رکھا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں