The news is by your side.

Advertisement

بیت لحم میں یہودی آباد کار نے فلسطینی خاتون کو گاڑی تلے روند کر شہید کردیا

یروشلم : فلسطینی سرزمین پر ناجائز قبضہ کرنے والے یہودی آباد کار نے بیت الحم میں فلسطینی خاتون کو گاڑی تلے روند کر شہید کردیا۔

تفصیلات کے مطابق مقبوضہ فلسطین میں اسرائیلیوں کی تخریب کاری و دہشت گردانہ کاررائیاں کم نہ ہوسکیں، گزشتہ روز مغربی کنارے کے جنوبی شہر بیت لحم میں ناجائز صیہونی ریاست اسرائیل کے شہری نے فلسطینی خاتون کو بے دردی سے شہید کردیا۔

مقامی فلسطینی ذرائع کا کہنا تھا کہ بیت الحم کے علاقے تقوع کے مقام پر ایک یہودی آباد کار نے فاطمہ محمد سلیمان نامی فلسطینی خاتون کو راہ چلتے ہوئے ٹرک تلے روند ڈالا اور فرار ہوگیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ فلسطینی خاتون کو اس کے گھر کے باہر ہی یہودی آباد کار نے گاڑی تلے روند دیا، اسرائیلی پولیس نے موقع پر پہنچ کر شہید فلسطینی کے گھر کے باہر لگے خفیہ کیمرے قبضے میں لے لئے۔

مزید پڑھیں : اسرائیلی جارحیت، ایک اور فلسطینی طالب علم شہید

یاد رہے کہ کچھ روز قبل غزہ میں اسرائیلی فوج نے ایک بار پھر نہتے اور پرامن مظاہرین پر بلا اشتعال فائرنگ کرکے پندرہ سالہ فلسطینی لڑکے کو شہید کردیا تھا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ غزہ کی وزارت صحت کے مطابق سیکڑوں فلسطینی غزہ کی سر حدی پٹی کے قریب اسرائیلی جارحیت اور ناجائز قبضے کے خلاف پرامن مظاہرہ کررہے تھے۔

اسرائیلی فوج نے مظاہرین پر اندھا دھند فائرنگ کردی، جس کے نتیجے میں پندرہ سالہ طالب علم شہید ہوگیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں