The news is by your side.

Advertisement

خطے میں بھارت کی چودھراہٹ قبول نہیں کرینگے، سراج الحق

لاہور : امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ خطے میں بھارت کی چودھراہٹ قبول نہیں کرینگے، حکومت پالیسیوں پر نظر ثانی کر لے، توبہ کا دروازہ کھلا ہے، عید کے بعد راولپنڈی سے اسلام آباد کی طرف پیدل مارچ کرینگے۔

لاہور میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی سراج الحق کا کہنا تھا کہ بھارت کو نیوکلیئر کلب کا ممبر نہیں بننا چاہیئے، اگر انڈیا کو این ایس جی کی رکنیت دی گئی تو یہ پاکستان سمیت خطے کیلئے خطرناک ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ بھارت کو علاقے کا پولیس مین بنانا چاہتا ہے، بھارت کی چودھراہٹ قبول نہیں کرینگے۔

امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ افغان مہاجرین باعزت واپسی چاہتے ہیں، افغانستان کا ماحول بہتر کیا جائے ، مہاجرین کو دھکے نہ دیئے جائیں، خواہش ہے کہ پاکستان اور افغانستان کے تعلقات برادرانہ ہوں۔

سراج الحق نے کہا کہ عید کے بعد راولپنڈی سے اسلام آباد کی طرف پیدل مارچ کرینگے، چیئرمین نیب کی تقرری حکومت اور اپوزیشن کی بجائے سپریم کورٹ اور ہائیکورٹس کے چیف جسٹس صاحبان کریں، حکومت نے ٹی او آرز پر اتفاق نہ کیا تو احتجاج کے سوا کوئی راستہ نہیں ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ متحدہ اپوزیشن بنانے میں حکومت کا بڑا کردار ہے، دیکھیں گے کہ حکومت عید کے بعد کیسا احتجاج چاہتی ہے، حکومت پالیسیوں پر نظر ثانی کرلے، توبہ کا دروازہ کھلا ہے، ورنہ حکمرانوں کے نام کے ساتھ سابقہ کا لاحقہ لگ جائے گا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں