The news is by your side.

Advertisement

جناح اسپتال کا مردہ خانہ موٹر سائیکل سروس سینٹر میں تبدیل

کراچی : شہر قائد کے سب سے بڑے سرکاری اسپتال میں موٹرسائیکلوں کی دھلائی کا کام شروع کردیا گیا، کوئی ایم ایل او وقت پر پہنچے یا نا پہنچے، مورچری کے اندر موٹر سائیکلوں کی دھلائی وقت پر ہوتی ہے۔

اے آر وائی نیوز کی ٹیم ایک مقامی شہری کی اطلاع پر جناح اسپتال کے مردہ خانہ پر پہنچی تو وہ دیکھنےھ میں بھوت بنگلہ کا منظر پیش کر رہا تھا۔

مردہ خانے کا دروازہ لاوارث لاش کی طرح کھلا ہوا تھا اور وہاں نہ کوئی ڈیوٹی افسر نہ کوئی ذمہ دار موجود تھا، وہاں صرف ایک ملازم موجود تھا۔

ایم ایل او کے کمرے کا دروزا کھلا ہونے کے علاوہ نلکے سے پانی بھی گررہا تھا، مذکورہ ملازم دنیا ومافیہا سے بے خبر اپنی موٹر سائیکل کی سروس کرتا رہا۔

قمیض اتارے ہوئے ملازم نے اندر جاتے ہوئے رپورٹر سے کوئی سوال بھی نہیں کیا بلکہ موبائل فون سے ویڈیو بنانے پر بھی ملازم ٹس سے مس نہ ہوا۔

اے آر وائی ٹیم کی موجودگی کے دوران ایک بچے کی لاش پوسٹ مارٹم کے لیے مورچری لائی گئی، ملازم نے جلدی سے اپنی قمیض پہننی اور خود کو مصروف ظاہر کرنے لگا۔

موٹر سائیکل سروس کولڈ اسٹوریج کے دروازے پر کی جارہی تھی، ملازم کے مطابق کولڈ اسٹوریج تقریباً 4 سال سے استعمال میں نہیں ہے، موٹر سائیکل پر پرائیویٹ نمبر کو  ہرا نمبر کرکے اسے سرکاری موٹر سائیکل ظاہر کیا گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں