کوہستانی جرگے کے حکم پرکراچی میں دوہرے قتل کی واردات -
The news is by your side.

Advertisement

کوہستانی جرگے کے حکم پرکراچی میں دوہرے قتل کی واردات

کراچی: شہرِ قائد میں جرگے کے حکم پر دوہرے قتل کی واردات خاموشی سے انجام پاگئی‘ پسند کی شادی کرنے والے جوڑے کو مار کر دفنادیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے مومن آباد میں جرگے کے حکم پر ہونے والے دوہرے قتل کا پولیس نے سراغ ڈھونڈ نکالا‘ نو ملزمان کو حراست میں لے لیا گیا۔

ذرائع کے مطابق مومن آباد تھانہ پولیس کو اطلاع ملی کہ ان کی حدود میں واقع ایک مکان میں کچھ روز قبل آکر آباد ہونے والا جوڑا اچانک غائب ہوگیا‘ جب پولیس نے مکان کو چیک کیا تو وہاں خون کے نشانات ملے۔

ایس پی اورنگی عابد بلوچ کا کہنا ہے کہ ابتدا میں کچھ پتا نہیں چل رہا تھا کہ یہ آکر آباد ہونے والا جوڑا کون تھا اور اچانک کہا ں چلا گیا‘ تاہم جب تفتیش کا دائرہ آگے بڑھا تو کچھ مشتبہ افراد کی گرفتاریاں ہوئیں۔ حراست میں لیے گئے ملزمان نے انکشاف کیا کہ نو بیاہتا جوڑے کا تعلق کوہستان سے تھا جسے12 روز قبل جرگے کے حکم پر قتل کردیا گیا۔

گرفتار ملزمان کے انکشافات پر مزید افراد کو گرفتار کیا گیا۔ کل نو ملزمان تاحال حراست میں آچکے ہیں جنہوں نے کوہستان کے مقامی جرگے کے حکم پر پسند کی شادی کرنے کے جرم میں قتل کیا گیا ہے‘ پولیس کے مطابق کل پندرہ افراد اس جرم میں شریک ہیں۔

تفتیش کے دوران انکشاف ہوا کہ قتل کی اس واردات میں لڑکے اور لڑکی ‘ دونوں کے گھر والے اور لڑکی کی جہاں منگنی کی گئی تھی‘ اس خاندان کے افراد مشترکہ طور پر شریک ہیں۔

ملزمان نے قتل کے بعد لاشیں اتحاد ٹاؤن کے قبرستان میں دفن کردی تھیں‘ پولیس کچھ دیر بعد اتحاد ٹاؤن قائم خانی قبرستان میں قبرکشائی کروائے گی‘ دوہرے قتل میں ملوث مزید افراد کی گرفتاری کے لیے چھاپہ مار کارروائیاں جاری ہیں۔

وزیراعلیٰ سندھ کا نوٹس


وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے مومن آباد میں پسند کی شادی پر جوڑے کے قتل کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی پولیس سے رپورٹ طلب کرلی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ کراچی ہے‘ یہاں کس طرح جرگہ ہوا اور جرگے نے قتل کا فیصلہ بھی کرلیا۔ قانون کو فوری طورپرحرکت میں لایا جائے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں