The news is by your side.

Advertisement

نواب وسان کے بھانجے کے قتل کیس کی تفتیش مکمل، مرکزی ملزم نے اعتراف جرم کرلیا

سکھر :نواب وسان کے بھانجے بلاول وسان کے قتل کے مرکزی ملزم سرفراز راجپوت نے جے آئی ٹی میں اعتراف جرم کرلیا ،بلاول وسان کو  گاڑی میں بوتل مار کر قتل کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق نواب وسان کےبھانجے بلاول وسان قتل کیس کی جے آئی ٹی نے تفتیش مکمل کرلی ، رپورٹ میں کہا گیا کہ قتل میں سرفراز راجپوت مرکزی ملزم ہیں جبکہ ایف آئی آر میں نامزد دو افراد زاہد راجپوت اور ثقلین شاہ بےقصو رہیں۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ بلاول وسان نے شراب پی تھی ،گاڑی میں بوتل مار کر قتل کیا گیا اور گاڑی کو آگ لگائی ، سرفراز راجپوت نے جے آئی ٹی میں اعتراف جرم کر لیا ہے۔

جے آئی ٹی نےرپورٹ سیکریٹری داخلہ سندھ کو بھیج دی ہے ، ایس ایس پی سکھر کی سربراہی میں عدالت کے حکم پر جے آئی ٹی بنائی گئی تھی۔

یاد رہے 18 نومبر2020 کو بھرگڑی کے قریب گاڑی سے پی پی رہنما منظور وسان اورنواب وسان کے بھانجے کی مسخ شدہ لاش برآمد ہوئی تھی، پولیس کا کہنا تھا کہ اے ایس آئی بلاول وسان لونگ فقیر پولیس چیک پوسٹ پرتعینات تھا۔

نواب وسان نے کہا تھا کہ بلاول وسان کو سازش کے تحت شہید کیا گیا ہے ، گاڑی میں آگ کی اطلاع 2 گھنٹے بعد ہوئی، ہمیں انصاف چاہیے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں