The news is by your side.

Advertisement

بھائی کا قتل ہونے کے باوجود آرچر نے ہمت نہ ہاری اور ٹیم کو فاتح بنایا

لندن: انگلش ٹیم کے فاسٹ باؤلر جوفرا آرچر نے بھائی کا قتل ہونے کے باوجود ہمت نہ ہاری اور اپنی ٹیم کو عالمی کپ کا چیمپئن بنا ڈالا۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق جس روز انگلینڈ نے ورلڈکپ 2019 میں اپنا پہلا میچ کھیلا اُسی روز آرچر کے بھائی بلیک مین کو گھر کے باہر نامعلوم افراد گولی مار کرچلے گئے تھے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق 24 سالہ ایشنٹیو بلیک مین کو بارباڈوس میں گھر کے باہر قتل کیا گیا البتہ اہل خانہ نے آرچر کو بھائی کے قتل کی اطلاع میچ کے بعد دی تاکہ اُن کی میچ میں کارکردگی متاثر نہ ہو۔

آرچر بھائی کے قتل کی خبر سننے کے بعد صدمے میں چلے گئے تھے البتہ اُن کے والد فرینک نے حوصلہ دیا اور کہا کہ یہ موقع انہیں زندگی میں دوبارہ میسر نہیں ہوگا لہذا اپنے دکھ اور کرب کی حالت سے باہر نکل کر ایونٹ پر دھیان دیں۔

مزید پڑھیں: ورلڈ کپ فائنل میں اللہ ہمارے ساتھ تھا، اوئن مورگن

فرینک نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ’’ایشنٹیو اور آرچر ہم عمر تھے اور دونوں ایک دوسرے کے اچھے دوست بھی تھے، جوفرا کو جب اس واقعے کی اطلاع ملی تو وہ ٹوٹ گیا تھا البتہ ٹیم مینیجمنٹ اور ساتھی کھلاڑیوں نے اُس کی ہمت بڑھائی‘‘۔

والد کے مطابق بلیک مین کو گھر کے باہر 31 مئی کے روز قتل کیا گیا اور اس روز انگلینڈ ورلڈکپ میں اپنا میچ کھیل رہا تھا، حملہ آوروں نے بیٹے کو 8 گولیاں ماریں جس کی وجہ سے وہ ہلاک ہوئے۔

یاد رہے کہ 14 جولائی کو لندن کے تاریخی گراؤنڈ لارڈز میں انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کے درمیان فائنل کھیلا گیا، سنسنی خیز میچ میں سپر اوور ہوا جس میں اسکور برابر ہوا البتہ آئی سی سی قانون کے تحت زیادہ باؤنڈریز لگانے پر انگلینڈ کو فاتح قرار دیا گیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں